The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس: حفاظتی سامان کی کمی نے نرس کی جان لےلی

واشنگٹن : حفاظتی ماسک نہ پہننے کے باعث امریکی ریاست فلوریڈا میں نرس کرونا وائرس میں مبتلا ہوکر ہلاک ہوگئی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق امریکا میں کرونا وائرس کی تباہ کاریاں تیزی سے جاری ہیں جس کے باعث اب تک لاکھوں افراد مریض اور ہزاروں ہلاک ہوچکے ہیں، انہیں ہلاک شدگان میں ایک نرس بھی شامل ہے جو فرنٹ لائن پر کوویڈ 19 سے لڑتے ہوئے زندگی کی بازی ہار گئی۔

امریکی ریاست فلوریڈا سے تعلق رکھنے والی 33 سالہ نرس ڈینیئل ڈینسو بغیر حفاظتی لباس اور ماسک کے انتہائی نگہداشت وارڈ میں کرونا مریضوں کی دیکھ بھال کررہی تھی۔

لمبی لمبی شفٹوں میں انسانیت کی خدمت کرنے والی ہیلتھ ورکر میں دوہفتے بعد کوویڈ 19 علامات ظاہر ہونا شروع ہوئیں جس کے بعد اس نے خود کو گھر میں ہی قرنطینہ کرلیا لیکن ڈینیئل کی حالت تیزی سے بگڑتی رہی اور کچھ دن بعد وہ اپنے کمرے میں مردہ حالت میں پائی گئی۔

33 سالہ نرس کے شوہر نے استپال پر الزام عائد کیا ہے کہ اسپتال انتظامیہ نے انہیں ماسک اور حفاظتی لباس فراہم ہی نہیں کیا جس کے باعث وہ کرونا کا شکار ہوئیں اور ان کا چار سالہ بیٹا ماں سے جدا ہوا۔

ان کے شوہر کا کہنا ہے کہ وہ ہمیشہ اپنے مریضوں کو اپنے سامنے رکھتی تھی، ایک دن اس نے اپنے کام کے دوران مجھے تصویر بھیجی تو میں حیران رہ گیا کہ اس کے پاس ماسک نہیں تھا۔

غیر ملکی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق نرس نے 23 مارچ کو کوویڈ 19 کا ٹیسٹ کروایا تھا جس کے بعد اس نے خود کو اپنے گھر میں قرنطینہ کرلیا اور کچھ ہی روز بعد دنیا سے گزر گئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں