site
stats
حیرت انگیز

ننھے سے سوراخ کے ذریعے آکٹوپس کا فرار

کیا آپ جانتے ہیں سمندر میں رہنے والا آکٹوپس جسے اپنی 8 ٹانگوں کی وجہ سے ہشت پا بھی کہا جاتا ہے انتہائی ذہین ہے؟

اب سے 40 کروڑ سال قبل وجود میں آنے والا یہ جانور زمین کے اولین ذہین جانوروں میں شمار کیا جاتا ہے۔ یعنی جس وقت یہ زمین پر موجود تھا، اس وقت ذہانت میں اس کے ہم پلہ دوسرا اور کوئی جانور موجود نہیں تھا۔

آکٹوپس میں ایک خاصا بڑا دماغ پایا جاتا ہے جس میں نصف ارب دماغی خلیات (نیورونز) موجود ہوتے ہیں۔

اس دماغ کے باعث یہ معمولی نوعیت کے پزل حل کرسکتا ہے جبکہ پالتو آکٹوپس اپنے مالک کو پہچاننے کی حیران کن صلاحیت بھی رکھتا ہے۔

آکٹوپس چونکہ ایک غیر فقاری (ان ورٹی بریٹ) جانور ہے یعنی ان میں ریڑھ کی ہڈی موجود نہیں لہٰذا یہ معمولی جگہوں سے باآسانی گزر جاتے ہیں۔

زیر نظر ویڈیو بھی ایسے ہی آکٹوپس بھی ہے جو ایک ننھے سے سوراخ کے ذریعے ایک کشتی سے آزاد ہوکر سمندر میں جا پہنچتا ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top