The news is by your side.

Advertisement

شام، جنگی جنون نے معصوم بچی کی جان لے لی

شام : حکومتی افواج کے محاصرے کی وجہ سے غذا نہ ملنے کی وجہ سے ایک ماہ کی بچی انتقال کرگئی.

سوشل میڈیا پر ایک ماہ کی سحر کی دل دہلانے والی تصاویر نے عالمی ضمیر کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا ہے,اس ننھی پری کا تعلق شام کے مشرقی علاقے غوطة سے تھا جو اتوار کو مقامی اسپتال میں انتقال کرگئی.

سحر جنگ بندی اور امن کے قیام کی سحر بن کر دنیا میں آئی لیکن اندھیروں کے پچاری طاقت ور قوتوں نے اسے کلی کو مسل کر رکھ دیا، سحر غزائیت کی کمی کا شکار تھی جب کہ اس کی والدہ بھی متوان خوراک نہ ملنے کے باعث کافی لاغر ہیں اور ایک ماہ کی معصوم بچی کو دودھ پلانے سے قاصر تھیں۔

خوراک نہ ملنے کی وجہ سے سحر کا وزن خطرناک حد تک گر گیا اور وہ غذائیت کی کمی کا شکار ہو گئی جس کی وجہ سے سحر دن بہ دن مزید کمزور ہوتی گئی اور جنگ میں مصروف عالمی طاقتوں کے ضمیر کو جھنجھوڑتے جھنجھوڑت اس  جہانِ فانی سے کوچ کر گئی اور کئی سوالات چھوڑ گئی.

عالمی میڈیا کے مطابق شام کے اس علاقے کا حکومتی افواج نے محاصرہ کر رکھا ہے جس کے باعث خوراک، امدادی سامان اور اشیائے ضرورت کی نقل حمل نہ ہونے کے برابر رہ گئی ہے اور مقامی افراد کو خوراک و ادویات کا کال پڑ گیا ہے جس کا شکار ایک ماہ کی معصوم سحر بھی ہو گئی.

عالمی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اس علاقے میں مخالف گروہ اور جنگجوؤں کا قبضہ ہے جسے ختم کرنے کے لیے اتحادی افواج نے علاقے کا محاصرہ کر رکھا ہے اور کسی بھی نقل و حمل کی اجازت نہیں ہے.

  اسی سے متعلق : ترک ساحل پر شامی بچے کی بے جان جسم کی تصویر نے دلوں کو لرزہ دیا

یہ بھی پڑھیں : بمباری سے متاثرہ شامی بچے کی ویڈیو نے عالمی سطح پر نئی بحث چھیڑ دی 

 

قبل ازیں 2015 میں ترک کے ساحل پر بے معصوم بچے ایلان کی بے جان لاش نے دنیا بھر کی توجہ حاصل کر لی تھی اور شام میں جاری جنگ و جدل سے متعلق نئی بحث کا آغاز ہوگیا تھا بعد ازاں 2016 میں حلب میں بمباری سے زخمی زخمی بچے کی ویڈیو نے ہر آنکھ کو اشکبار کردیا تھا لیکن تاحال شام میں فسادات حل طلب ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں