The news is by your side.

Advertisement

دہشت گردی اور منی لانڈرنگ کے خلاف پاک ترک باہمی تعاون کا عزم

اسلام آباد: پاکستان اور ترکی نے دہشت گردی اور منی لانڈرنگ کی روک تھام کے سلسلے میں ایک دوسرے سے تعاون کا عزم کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیرِ اعظم عمران خان سے ترک وزیرِ داخلہ سلیمان سوئیلو کی ملاقات میں دونوں ممالک کی طرف سے ایک دوسرے کو دہشت گردی اور منی لانڈرنگ کے سلسلے میں تعاون کی پیش کش کی گئی ہے۔

منی لانڈرنگ کی روک تھام کے لیے پاکستان سے تعاون کے لیے تیار ہیں۔

سلیمان سوئیلو ترک وزیرِ داخلہ

وزیرِ اعظم عمران خان نے ترکی کو دہشت گردی کے خاتمے کے لیے مشترکہ اقدامات کی پیش کش کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی ایک ملک نہیں پورے خطے کی سلامتی کے لیے خطرہ ہے۔

وزیرِ اعظم نے ترک حکام کو منی لانڈرنگ کی روک تھام کے لیے اقدامات پر بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ غیر قانونی امیگریشن اور منی لانڈرنگ کے خلاف ہنگامی بنیادوں پر کام جاری ہے۔

ترک وزیرِ داخلہ سلیمان سوئیلو نے کہا کہ ہم منی لانڈرنگ کی روک تھام کے لیے پاکستان سے تعاون کے لیے تیار ہیں۔ دریں اثنا دونوں ممالک کا غیر قانونی امیگریشن کے خاتمے کے لیے مضبوط میکنزم بنانے پر بھی اتفاق کیا گیا۔


یہ بھی پڑھیں:   ترک وزیرداخلہ کی وزیراعظم عمران خان کو دورہ ترکی کی دعوت


ملاقات میں ترکی کی طرف سے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی قربانیوں کا اعتراف کیا گیا، وزیرِ داخلہ نے کہا کہ پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بے پناہ قربانیاں دیں۔

وزیرِ اعظم عمران خان نے کہا ترکی کے لیے پاکستانی عوام کے دلوں میں بے پناہ محبت ہے، عوام مصطفیٰ کمال اتاترک کی ترکی کے لیے خدمات کو جانتے ہیں، موجودہ ترک قیادت نے ملکی ترقی کے لیے انتہائی اہم اقدامات کیے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں