The news is by your side.

پاکستان سے یہ غلطیاں ہوئیں

انگلینڈ کے خلاف ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ فائنل میں قسمت نے بھی ساتھ نہیں دیا اور پاکستان کرکٹ ٹیم نے بھی کئی غلطیاں کیں، شاہینوں کی سست بیٹنگ اور افتخار احمد کا اوور بڑے نقصان کا باعث بنا۔

میلبرن میں قسمت ساتھ نہیں تھی اور ٹاس ہارے تو مشکل وہی سےشروع ہو گئی جس کا ڈر تھا وہ ہی ہوا۔ بابر اور رضوان کی جوڑی نہیں چلی۔ انگلینڈ نےپھر دباؤ بڑھا دیا۔ بتدائی چھ اوورز میں پاکستان صرف انتالیس رنز بنا سکا۔

پاکستان نے اڑتالیس ڈاٹ بالز کھیلیں جو آٹھ اوورز بنتے ہیں جب کہ ڈیتھ اوورز میں بھی اوسط نہیں بڑھ سکی اور صرف اکیس رنز ہی بنے ساتھ میں چار وکٹیں بھی گریں۔

بابراعظم نے میچ میں ہونے والا سب سے بڑا نقصان بتا دیا

باؤنڈریز کے صرف چوالیس رنز بنے۔ بولنگ میں رن آؤٹ چانس بچے اور اہم موڑ پر شاہین شاہ آفریدی انجرڈ ہوگئے۔ دو اہم اوورز پاکستان کے ہاتھ سے نکل گئے۔ افتخار نےکوٹےکی پانچ بالز کی تو اسٹوکس نےچارج کر دیا، پھنسا ہوا میچ وہی سے پلٹ گیا اور انگلینڈ جیت گیا۔

پاکستان اپنی غلطیوں سےانگلینڈکےخلاف فائنل ہار گیا تاہم شائقین کرکٹ، سابق کرکٹرز اور لیجنڈز نے گرین شرٹس کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے زبردست فائٹنگ پر خوب پذیرائی کی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں