The news is by your side.

Advertisement

پاکستان کی آذربائیجان کو مبارکباد، امن معاہدے کا خیرمقدم

پاکستان نے آذربائیجان اور آرمینیا کے مابین 6 ہفتوں سے جاری جنگ کے اختتام کے لیے امن معاہدے خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ فریقین کاجنگ بندی کےخاتمےکےاعلان کاخیرمقدم کرتےہیں۔

ترجمان دفترخارجہ زاہدحفیظ چوہدری نے اہم پیش رفت پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان نےہمیشہ نگورنو کاراباخ کے تنازع پرسلامتی کونسل کی قراردادکی حمایت کی، فریقین کاجنگ بندی کےخاتمےکےاعلان کاخیرمقدم کرتے ہیں۔

ترجمان دفترخارجہ نے کہا کہ روس کی مدد سے سہ فریقی معاہدہ جنوبی قفقاز خطےمیں قیام امن کاموقع ہے، امیدہےخطےمیں استحکام اورخوشحالی کادورشروع ہوگا اور بےگھرافرادکی اپنےآبائی علاقوں کو واپسی کاراستہ ہموارہوگا۔

ترجمان زاہدحفیظ چوہدری نے کہا کہ مقبوضہ علاقےآزاد کرانے پر آذربائیجان کےعوام اور حکومت کومبارکباد پیش کرتے ہیں۔

روس کی ثالثی : آرمینیا اور آذربائیجان کے درمیان جنگ بندی کے معاہدے پر دستخط

واضح رہے کہ پاکستان نے آرمینیا سے جنگ میں آذربائیجان کے موقف کی حمایت کرتے ہوئے ہر فورم پر اپنی تائید اور معاونت کا یقین دلایا تھا۔

آذربائیجان کے ساتھ جنگ میں آرمینیا نے پسپائی اختیار کرتے ہوئے روس کی ثالثی میں مکمل جنگ بندی کے معاہدے پر دستخط کر دیئے، روسی صدر کا کہنا ہے کہ جنگ بندی پر عملدرآمد آج رات سے شروع ہوگا۔

اس حوالے سے آذربائیجان کے صدر نے معاہدے کو تاریخی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ترکی معاہدے کا حصہ دار ہوگا، آرمینیا نگورنو کاراباخ سمیت کئی علاقوں سے دستبردار ہوجائے گا، معاہدے کے مطابق قبضے میں لئے گئےعلاقوں پر آذربائیجان کا قبضہ برقرار رہے گا۔

آرمینیا کے وزیرِاعظم کہتے ہیں نگورنو کاراباخ معاہدہ تکلیف دہ ہے لیکن دفاعی ماہرین سے زمینی حقائق جاننے کے بعد روس کی ثالثی میں جنگ ختم کرنے کا معاہدہ کیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں