حکومت کا الطاف حسین کی حوالگی کا مطالبہ نہ کرنے کا فیصلہ -
The news is by your side.

Advertisement

حکومت کا الطاف حسین کی حوالگی کا مطالبہ نہ کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد: حکومت پاکستان نے متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین کے خلاف برطانیہ میں مقدم چلوانے کا فیصلہ کیا ہے تاہم ان کی پاکستان حوالگی کا مطالبہ نہیں کیا جائےگا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ برطانیہ میں تشدد پر اکسانے کے قوانین سخت ہیں، اپنی اشتعال انگیز تقریر سے کسی کو تشدد یا دہشت گردی کے لیے اکسانے برطانوی قوانین کے تحت سنگین جرم کے زمرے میں آتا ہے، اس لیے حکومت پاکستان کی جانب سے شواہد پیش کرنے پر الطاف حسین کے خلاف سخت کارروائی کا امکان ہے، الطاف حسین کے خلاف کارروائی کے لیے وزارت داخلہ نے برطانوی حکام پر دبائو بڑھا دیا ہے۔

ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ قائم ایم کیو ایم کی پاکستان حوالگی کا مطالبہ نہیں کیا جائےگا اس کی ایک وجہ یہ ہے کہ پاکستان کا برطانیہ کے ساتھ حوالگی کا کوئی معاہدہ نہیں ہے اس لیے پاکستان کے طلب کرنے پر بھی برطانیہ پابندی نہیں ہے کہ اپنے شہری کو پاکستان کے حوالے کرے۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ الطاف حسین کی حوالگی کا مطالبہ نہ کرنے کی دوسری وجہ یہ ہے کہ برطانیہ اپنے کسی بھی شہری کو ا یسے ملک کے حوالے ویسے بھی نہیں کرتا جہاں سزائے موت کا قانون موجود ہو۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں