The news is by your side.

Advertisement

پاکستان نے ایف اے ٹی ایف اور ایشیا پیسفک گروپ کا بڑا مطالبہ پورا کر دیا

ایف بی آر سونا، چاندی، پلاٹینیم، ہیرے جواہرات کے کاروبار کو بھی مانیٹر کرے گا

اسلام آباد: فنانشل ایکشن ٹاسک فورس اور ایشیا پیسفک گروپ کا بڑا مطالبہ پورا ہو گیا، پاکستان نے 6 شعبوں کے لیے نئے سیکٹر ریگولیٹرز کا تقرر مکمل کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق ذرایع نے خبر دی ہے کہ پاکستان نے ایف اے ٹی ایف کے سلسلے میں بڑی پیش رفت کی ہے، اہم شعبوں میں سیکٹر ریگولیٹرز کی تقرری کا مرحلہ مکمل کر لیا گیا ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق فنانشل مانٹیرنگ یونٹ کے نئے سیکٹر ریگولیٹرز کے لیے رولز کی تیاری بھی شروع کر دی گئی ہے، ذرایع نے بتایا کہ سیکٹر ریگولیٹرز کی تعیناتی رپورٹ ایف اے ٹی ایف سیکریٹریٹ کو ارسال کر دی گئی، اس رپورٹ پر پیرس میں 16 فروری سے شروع ہونے والے ایف اے ٹی ایف اجلاس میں غور کیا جائے گا۔

ایف اے ٹی ایف نے پاکستان کو دو ماہ کا مزید وقت دے دیا

ذرایع کا کہنا ہے کہ پاکستان نے ایف اے ٹی ایف ایکشن پلان پر عمل درآمد مؤثر بنانے کے لیے اقدامات تیز کر دیے ہیں، منی لانڈرنگ اور ٹیرر ازم فناسنگ کی روک تھام سے متعلق اقدامات جاری ہیں، اس سلسلے میں ایف بی آر سونا، چاندی، پلاٹینیم، ہیرے جواہرات کے کاروبار کو بھی مانیٹر کرے گا۔

سکیٹر ریگولیٹرز میں ایس ای سی پی کو چارٹرز اکاؤنٹس کا سپروائزی ریگولیٹر، وزارت قانون کو بار کونسلز وکلا، قانونی مشیروں، نوٹری پبلک کے لیے سیکٹر ریگولیٹر مقرر کیا گیا، قومی بچت اسکیموں میں سرمایہ کاری کی جانچ پڑتال کے لیے بھی ریگولیٹری عمل شروع کر دیا گیا، ذرایع نے بتایا کہ اسکیموں کی سرمایہ کاری کی جانچ پڑتال کی ذمہ داری نجی بینک کے سپرد کی جائے گی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں