The news is by your side.

Advertisement

پاکستان کی گرے لسٹ سے نکلنے کیلئے کوشش تیز، عالمی اداروں سے تعاون کا فیصلہ

اسلام آباد : پاکستان نے فنانش ایکشن ٹاسک فورس کی گرے لسٹ سےنکلنے کیلئے کوششیں تیز کر دیں اور عالمی اداروں سے تعاون کا فیصلہ کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان نے فنانش ایکشن ٹاسک فورس کی گرے لسٹ سےنکلنے کیلئے عالمی اداروں سے تعاون کا فیصلہ کرلیا ہے، وزارت خرانہ زرائع کے مطابق ایشیا پیسفک ر گروپ آن منی لانڈرنگ کا وفد اپریل کے دوسرے ہفتے میں اسلام آباد پہنچے گا اور حکومت کے سینئر وزراء اور حکام کو ایکشن پلان تیار اور ترجیح وضع کرنے سے متعلق مشورہ اور مدد کرے گا۔

ذرائع کے مطابق پاکستان کو اے پی جی اور اسٹک ہولڈرز سے مشاورت کرکے ایکشن پلان تیار کرنا ہوگا اور ایف اے ٹی ایف کو یہ پلان مئی میں جمع کروانا ہے۔


مزید پڑھیں :  ٹرمپ انتظامیہ پاکستان کا نام واچ لسٹ میں ڈالنے کے لیے سرگرم


خیال رہے کہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے پاکستان کوگر لسٹ میں شامل کیا ہے اور اس لسٹ کا اطلاق رواں سال جون سے ہوگا۔

دوسری جانب آئی ایم ایف کے نائب مینیجگ ڈائریکٹ تاؤ ژنگ کا کہنا ہے کہ گرے لسٹ میں شمولیت کسی بھی ملک کی آئی ایم ایف سے قرض کے حصول پر اثر انداز نہیں ہوگی، پاکستان نے آئی ایم ایف کے ساتھ پروگرام مکمل کیا ہے اور معاشی اصلاحات بھی ہوئی ہیں۔

یاد رہے کہ امریکا اور اس کے اتحادی ممالک نے پاکستان کا نام دہشت گرد تنظیموں کے مالی معاملات پر کڑی نظر نہ رکھنے والے ممالک کی واچ لسٹ میں شامل کرنے کی قرارداد پیش کی تھی۔

مشیر خزانہ مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ عالمی واچ لسٹ میں نامزدگی رکوانے کے لیے امریکا، برطانیہ، فرانس اور جرمنی سے رابطے میں ہیں۔ توقع ہے پاکستان کو واچ لسٹ میں نہیں ڈالا جائے گا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں