The news is by your side.

Advertisement

پناہ گاہوں سے مستفید افراد کا کمپیوٹرائزڈ ڈیٹابیس بنانے کا فیصلہ

اسلام آباد : وزیراعظم کی ہدایت پر پناہ گاہوں سے مستفید افراد کا کمپیوٹرائزڈ ڈیٹابیس بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے، اس سلسلے میں وزیراعظم عمران خان نے فوکل پرسن برائے پناہ گاہ نسیم الرحمان کو ٹاسک سونپ دیا۔

اس حوالے سے فوکل پرسن نسیم الرحمان نے کہا کہ ملک بھر میں اب تک 50 پناہ گاہیں قائم کی جاچکی ہیں، یہ پناہ گاہیں اسلام آباد، پشاور، راولپنڈی، لاہور، فیصل آباد اور سیالکوٹ میں ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ ڈیٹابیس سے پتہ چل سکے گا کن اضلاع میں غربت کی شرح زیادہ ہے، پہلی بار ریاست غریب طبقے کی ذمہ داری لے رہی ہے، خوراک اور رہائش کی فراہمی بنیادی آئینی حقوق ہیں۔

نسیم الرحمان کا کہنا تھا کہ آئندہ سال مزید1000پناہ گاہیں بنانے کا منصوبہ زیرغور ہے، پاکستان کو انصاف پسند، فلاحی ریاست بنانا وزیراعظم کا وژن ہے، وزیراعظم کا مستحق افراد کو اولین ترجیح کا بیانہ حقیقت میں بدل رہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں