بھارت: پرچہ آوٹ ہونے سے بیس لاکھ طالب علم متاثر، والدین سراپا احتجاج: India
The news is by your side.

Advertisement

بھارت: پرچہ آوٹ ہونے سے بیس لاکھ طالب علم متاثر، والدین سراپا احتجاج

ممبئی: بھارت کے مختلف اسکولوں میں امتحان کے دوران پرچہ آؤٹ ہوگیا جس کے باعث بیس لاکھ سے زائد طالب علم متاثر ہوئے، والدین نے احتجاج کرتے ہوئے انکوائری کا مطالبہ کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت کے مختلف اسکولوں میں تعلیمی بورڈ برائے سیکنڈری ایجوکیشن کی جانب امتحان لیے جارہے ہیں جہاں لاکھوں کی تعداد میں طالب علم پرچے دے رہے ہیں تاہم گذشتہ دنوں پرچے لیک ہونے کے باعث انہیں دوبارہ امتحان دینا پڑے گا۔

مقامی میڈیا کے مطابق امتحان سے قبل ریاضی اور معاشیات کے پرچے لیک ہوئے، مذکورہ دونوں پرچے امتحان سے قبل ہی سماجی رابطے کی ویب سائٹ واٹس ایپ پر شیئر کیے جارہے تھے، جس کے باعث امتحان دوبارہ لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

امتحان گاہ میں جوتے اور موزے پہن کر داخلے پر پابندی عائد

تعلیمی بورڈ برائے سیکنڈری ایجوکیشن کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ ایک سنگین مسئلہ ہے، البتہ اب طلبہ و طالبات کو دربارہ امتحان دینا پڑے گا، جس کے لیے جلد امتحان کی نئی تاریخ کا اعلان کیا جائے گا۔

دوسری جانب طالب علموں نے اپنے والدین کے ہمراہ بورڈ کے خلاف بھرپور احتجاج کیا، اس دوران بچوں کا کہنا تھا کہ ’ہم نے کئی ماہ محنت کے بعد پرچوں کی تیاری کی تھی لیکن افسوس کہ اب ہمیں دوبارہ امتحان دینا پڑے گا، یہ سیکنڈری بورڈ کی نااہلی ہے کہ وہ پرچوں کو محفوظ نہیں رکھ سکے۔

چین کا امتحان میں نقل روکنے کیلئے انوکھا ہتھیار

بعد ازاں کانگریس پارٹی کے صدر راہول گاندھی نے واقعے سے متعلق شدید غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے کئی لاکھ بچوں کا مستقبل داؤ پر لگا دیا ہے، انتظامیہ کی نااہلی کے باعث ایسے واقعات بھارت میں ہوتے رہتے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں