The news is by your side.

Advertisement

کرونا کی ڈیلٹا قسم کے متاثرین سے متعلق پریشان کن انکشاف

ٹوکیو: جاپان میں‌ مرتب ہونے والے اعداد و شمار میں‌ یہ اہم بات سامنے آئی ہے کہ کرونا کی متغیر قسم ڈیلٹا کے متاثرین 4 گنا زیادہ وائرس خارج کرتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کرونا وائرس کی دیگر اقسام کے متاثرین کے مقابلے میں ڈیلٹا سے متاثرہ افراد میں پیتھوجن یعنی مرض کے جرثومے خارج کرنے کی شرح تخمینے کے مطابق کم از کم چار گنا زیادہ ہے۔

اس سلسلے میں تجربہ گاہ میں ٹیسٹنگ کی خدمات فراہم کرنے والی جاپانی کمپنی ’بی ایم ایل‘ نے اعداد و شمار مرتب کیے ہیں، یہ کمپنی کرونا وائرس کے یومیہ 20 ہزار تک پی سی آر ٹیسٹ کرتی ہے۔

ایک پی سی آر ٹیسٹ وائرس کی جینز کو ایک نمونے میں ضرب کرتا ہے، جب اس ضرب کے عمل میں وائرس کا پھیلاؤ کم چکروں کے ساتھ پایا جائے، تو اس کا مطلب یہ ہوتا ہے کہ مذکورہ نمونے میں وائرس کی ایک بڑی مقدار موجود ہے۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ رواں سال جنوری میں 38 فی صد نمونوں میں 20 سے کم چکروں کے بعد وائرس کا پتا چلا تھا،

اپریل میں جب متغیر قسم الفا پھیل رہی تھی تو یہ تناسب بڑھ کر 41.4 فی صد ہو گیا تھا۔ جب کہ جولائی میں متغیر قسم ڈیلٹا کے غالب آ جانے کے بعد یہ تناسب تقریباً 66 فی صد تک بڑھ گیا اور اگست میں تقریباً 64 فی صد رہا۔

واضح رہے کہ ان چکروں کی تعداد کو سی ٹی ویلیو کہا جاتا ہے، 40 یا اس سے کم کی قدر، ٹیسٹ کا نتیجہ مثبت ہونے کی نشان دہی کرتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں