The news is by your side.

Advertisement

نینسی پلوسی نے امریکیوں کے لیے 3 کھرب ڈالرز کا بڑا وائرس بل متعارف کرا دیا

واشنگٹن: اسپیکر ایوان نمائندگان نینسی پلوسی نے امریکیوں کے لیے 3 کھرب ڈالرز کا بڑا وائرس بل متعارف کرا دیا۔

تفصیلات کے مطابق ڈیموکریٹ پارٹی نے 3 کھرب ڈالرز کا نیا امدادی پیکج متعارف کرا دیا ہے، جسے ’ہیروز ایکٹ‘ کا نام دیا گیا ہے، اس ایکٹ پر جمعے کو ووٹنگ کا امکان ہے۔

بل میں ریاستوں اور مقامی حکومتوں کے لیے ایک کھرب ڈالرز رکھے گئے ہیں، 200 ارب ڈالرز ملازمین کی تنخواہوں اور 75 ارب کرونا ٹیسٹنگ کے لیے مختص کیے گئے ہیں، بل میں 4 افراد پر مشتمل ہر خاندان کے لیے 6 ہزار ڈالرز بھی مختص کیے گئے ہیں۔

کوروناوائرس کے اثرات ، سپر پاور امریکا بڑا قرضہ لینے پر مجبور

تاہم، دوسری طرف حکمران ری پبلکن پارٹی نے نئے امدادی پیکج کو مسترد کر دیا، ری پبلکن سینیٹر جان باروسو کا کہنا تھا کہ کرونا کے حوالے سے ابھی نئی فنڈنگ کی ضرورت نہیں، یہ بل منظور نہیں کیا جائے گا۔

ادھر اسپیکر ایوان نمائندگان نینسی پلوسی کا کہنا تھا کہ متاثر ہونے والے خاندانوں کی پریشانیاں ختم نہیں ہوئیں، کرونا کی موجودہ صورت حال ایک تاریخی چیلنج ہے، بھوک وقفہ لیتی ہے نہ کرایہ، نوکری جانے کی تکلیف اور کسی پیارے کا چلے جانا بھی وقفہ نہیں لیتا، امریکی عوام کی ضروریات پوری کرنے کا یہ اہم وقت ہے۔

یاد رہے کہ مارچ میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اعلان کیا تھا کہ کرونا وائرس کے پیش نظر کاروبار بند ہونے سے متاثر امریکیوں کو امدادی چیک دیے جائیں گے۔ اپریل میں نینسی پلوسی نے ٹرمپ پر تنقید کرتے ہوئے کہا تھا کہ ان کا امدادی چیک پر نام چھاپنا انتہائی شرم ناک حرکت ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں