The news is by your side.

Advertisement

عدالتوں میں زیر التوا مقدمات کی تفصیلات فراہم کی جائیں، سپریم کورٹ کا نیب کو حکم

اسلام آباد : سپریم کورٹ نے زیر التوا کرپشن مقدمات کی تفصیلات طلب کرلیں غیر فعال احتساب عدالتوں کی تفصیلات بھی فراہم کی جائیں،عدالت عظمیٰ نے وفاقی سیکریٹری قانون کو طلب کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے اللہ دینو بھائیو نامی ملزم کی درخواست ضمانت کی سماعت کے دوران حکم دیا ہے کہ زیر التوا کرپشن مقدمات کی تفصیلات اور غیر فعال احتساب عدالتوں کی تفصیلات عدالت کو فراہم کی جائیں، عدالت عظمیٰ نے وفاقی سیکریٹری قانون کو بھی طلب کرلیا۔

کیس کی سماعت کے دوران اللہ دینو بھائیو نامی ملزم کے وکیل شاہ خاور نے بتایا کہ میرا مؤکل کبھی عوامی عہدیدار نہیں رہا، اللہ دینو بھائیو پر ترقیاتی کاموں کی مدمیں22ملین روپے کی کرپشن کا الزام ہے۔

احتساب عدالت میں ٹرائل نیب کی وجہ سے تاخیر کا شکار ہے۔ جسٹس منصورعلی نے کہا کہ ملزم 2018 سے جیل میں ہے، نیب کے مقدمات کیوں نہیں چل رہے ؟

جس پر نیب پراسیکیوٹر کا کہنا تھا کہ احتساب عدالت میں ملزم پر فرد جرم عائد ہوچکی ہے، جسٹس مشیر عالم نے کہا کہ2018کے بعد سے ٹرائل میں کیا پیشرفت ہوئی؟ اور قانون کے مطابق نیب مقدمات کا 30 دن میں فیصلہ ہونا چاہیے، جسٹس منصور علی شاہ نے کہا کہ احتساب عدالتوں میں تو روزانہ سماعت ہونی چاہیے۔

ملزم کے وکیل شاہ خاور نے کہا کہ ملزم پر مبینہ کرپشن کا50فیصد بطور احتجاجاً جمع کرانے کو تیار ہے، عدالت ضمانت منظور کرے تو نصف رقم جمع کرا دیں گے، جس پر نیب پراسکیوٹر کا کہنا تھا کہ ملزم کے پاس اتنی رقم ہے تو پلی بارگین کر لے۔

عدالت نے ملزم کی پیشکش مسترد کرکے درخواست ضمانت خارج کر دی، جسٹس مشیر عالم نے کہا کہ آپ کی درخواست تو خارج ہوگئی مگر تفصیلات کا بہت لوگوں کو فائدہ ہوگا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں