The news is by your side.

Advertisement

قصہ خوانی بازار کی جامع مسجد میں دھماکا، 56 افراد شہید

پشاور: ملک دشمن عناصر نے مذموم کارروائی کرتے ہوئے پشاور کے معروف قصہ خوانی بازار کو خون میں نہلادیا ہے۔

پشاور کے مشہور و معروف قصہ خوانی بازار کی جامع مسجد میں دھماکا ہوا ہے، دھماکے میں بچوں سمیت 56 افراد شہید ہوگئے ہیں۔

ترجمان لیڈی ریڈنگ اسپتال نے بتایا کہ دھماکے میں 56 افراد شہید ہوچکے ہیں دھماکےکے194زخمی ایل آرایچ لائےگئے،، جنہیں طبی امداد دی جارہی ہے،ادویات،طبی عملہ، خون ایمرجنسی میں فراہم کیاگیا.

ترجمان کے مطابق بیشتر زخمیوں کی حالت تشویشناک ہے ، جس کے باعث خدشہ ہے کہ شہادتوں میں مزید اضافہ ہوسکتا ہے۔

ایس پی سٹی نے افسوسناک واقعے سے متعلق بتایا کہ دھماکا جامع مسجد کوچہ رسالدار میں اسوقت ہوا جب نمازی جمعے کی نماز کی ادائیگی میں مصروف تھے، دھماکے کے بعد مسجد میں افراتفری پھیل گئی اور ہر کوئی اپنے پیاروں کی تلاش میں مارا مارا پھرتا رہا۔

حملہ آوروں نے مسجد میں گھسنے کی کوشش کی

پولیس کی جانب سے جاری ابتدائی بیان میں بتایا گیا ہے کہ دو نامعلوم حملہ آوروں نے جامع مسجد میں داخل ہونے کی کوشش کی، جس پر ڈیوٹی پر موجود پولیس اہلکاروں اور دہشت گردوں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ بھی ہوا، دہشت گردوں کی فائرنگ کے نتیجے میں ایک پولیس جوان نے جام شہادت نوش کیا ہے جبکہ دوسرے کی حالت تشویشناک ہے۔

دھماکے سے قبل فائرنگ

ترجمان کے پی حکومت بیرسٹر سیف نے میڈیا کو بتایا کہ اطلاعات ہیں کہ دہشتگردوں نے پہلے مسجد میں گھسنے کی کوشش کی جہاں پولیس سے مقابلہ ہوا اور مسجد میں جا گھسے، واقعے کے بعد علاقے کو سیکیورٹی فورسز نے گھیرے میں لےلیاہے۔

ترجمان لیڈی ریڈنگ اسپتال

ترجمان لیڈی ریڈنگ اسپتال محمد عاصم نے بتایا کہ اسپتال میں ایمرجنسی نافذ کرنے کے بعد عملے کی چھٹیاں منسوخ کردی گئیں ہیں اور غیر حاضر طبی عملے کو فوری طلب کرلیا گیا ہے۔

ترجمان ایل آر ایچ نے بتایا کہ زخمیوں کو زیادہ تر سر میں زخم آئے ہیں، اس وقت ایمرجنسی کی صورت حال ہے، پہلی ترجیح زخمیوں کی جان بچانا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں