The news is by your side.

پیٹرولیم مصنوعات کی فروخت میں ایک بار پھر کمی

اسلام آباد : پاکستان میں گزشتہ چند ماہ کے دوران پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ہونے والے اضافے نے عوام کی قوت خرید کو بھی متاثر کیا ہے، جس کے سبب پیٹرول کی فروخت میں نمایاں کمی سامنے آئی ہے۔

اس حوالے سے جاری رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ رواں مالی سال کی پہلے پانچ ماہ میں ملک میں پیٹرولیم مصنوعات کی فروخت میں سالانہ بنیادوں پر20 فیصد کی کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔

آئل کمپنیز ایڈوائزری کونسل کی جاری کردہ رپورٹ کے مطابق رواں مالی سال کے پہلے پانچ ماہ جولائی تا نومبر2022 کے دوران پٹرولیم مصنوعات کی فروخت میں نمایاں کمی ریکارڈ کی گئی۔

اعداد و شمار کے مطابق پچھلے پانچ ماہ میں مجموعی طور پر77لاکھ ٹن پٹرول، فرنس آئل اور ڈیزل فروخت ہوا جو سال 2022کے96 لاکھ ٹن کے مقابلے میں20فیصد کم ہے۔

او سی اے سی کے مطابق اس عرصے میں پٹرول کی فروخت میں 16فیصد، ڈیزل کی فروخت میں 24فیصد اور فرنس آئل کی فروخت میں 26فیصد کمی آئی ہے۔

اعداد و شمار کے مطابق سالانہ لحاظ سے نومبر میں فرنس آئل کی فروخت میں سب سے زیادہ یعنی 33فیصد کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق جولائی تا نومبر کے پانچ ماہ میں بھی فرنس آئل سب سے کم فروخت ہوا جس کا مطلب ہے کہ فرنس آئل مہنگا ہونے پر لوڈشیڈنگ بڑھا کر کھپت کم کی جارہی ہے۔

آئل کمپنیوں کے لحاظ سے دیکھا جائے تو پی ایس او کی پٹرولیم مصنوعات فروخت میں پچھلے پانچ ماہ کے دوران18 فیصد،اے پی ایل کی فروخت میں 21فیصد،شیل کی فروخت میں 23فیصد اور ہیسکول کی فروخت میں2فیصد کمی آئی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں