The news is by your side.

Advertisement

پی آئی اے کی ری اسٹرکچرنگ کا نوٹیفیکشن جاری

کراچی : پاکستان انٹرنیشنل ائرلائنز کو خسارے سے نکال کر اسے ایک منافع بخش ادارہ بنانے کے لئے قومی ائرلائن کی ری اسٹرکچرنگ کا نوٹیفیکشن جاری کردیا گیا ہے۔

دنیا کی کامیاب ائرلائنز کے ماڈلز کی پیروی کرتے ہوئے پی آئی ائی کے بورڈ آف ڈائریکٹرز نے قومی ائرلائن کو جدید پیشہ ورانہ خطوط پر استوار کرنے کے لئے اس امر کی منظوری دی ہے کہ پی آئی اے میں مختلف شعبوں کی سربراہی کے لئے ڈائریکٹرز کی جگہ چیف آفیسرز کی تقرری عمل میں لائی جائے۔

ری اسٹرکچرنگ کے ان انتظامی اصلاحات کے تحت اب چیف آپریٹنگ آفیسر, چیف کمرشل آفیسر, چیف ٹیکنیکل آفیسر, چیف فنانشل آفیسر, چیف ہیومن ریسورس آفیسر, چیف کارپوریٹ ڈویلپمنٹ آفیسر, جنرل منیجر پروکیورمنٹ اینڈ لاجسٹکس, چیف انفارمیشن آفیسر, چیف آفیسر/جنرل منیجر سیفٹی اینڈ کوالٹی ایشورنس اپنے متعلقہ شعبوں کے سربراہان ہوں گے۔

ceo-order

یہ تمام افسران پی آئی اے کے چیف ایگزیکٹو افسر کو رپورٹ کریں گے۔جس کے لئے پی آئی اے انتظامیہ نے نوٹیفیکشن جاری کردیا۔

دریں اثنا بدھ کی شام عشائیہ کے دوران وزیراعظم کے مشیر ہوابازی سردار مہتاب احمدخان نے پی آئی اے کے تمام شعبوں کے ڈائریکٹرز, جنرل منیجرز, چیف انجنیئرز, پالپا و دیگر پیشہ ورانہ یونینز کے اور عہدیداران سے خطاب کرتے ہوئے پی آئی اے بورڈ کے فیصلوں پر عملدرآمد کو خوش آئند قرار دیا۔

اس ضمن میں انہوں نے پی آئی اے حکام اور کارکنان کے تعاون کا خیرمقدم کیا انہوں نے کہا کہ پی آئی اے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے فیصلوں پر عمل درآمد کے نتیجہ میں ان انتظامی اصلاحات اقدام کا مقصد وزیراعظم محمد نواز شریف کے ویژن کے مطابق پی آئی اے کو ایک مستعد, فعال اور ذمہ دار انتظامیہ کے ذریعہ پی آئی اے کو ایک کامیاب کمرشل ادارہ میں ڈھالنا ہے۔

اس طرح پی آئی اے کو خسارے, زبوں حالی اور بحرانوں سے نکال کر ایک بار پھر قابل فخر قومی اثاثہ بنایا جائے گا جس میں فلائٹ سیفٹی کے ساتھ دوران پرواز اعلیٰ ترین معیار کی خدمات کی فراہمی کو اولیت دی جاٰے گی۔

انہوں نے کہا کہ شاندار ماضی کا حامل یہ ادارہ ایک بار پھر قومی ترقی میں اہم کردار ادا کرسکتا ہے اور خطہ میں رونما ہونے والی اقتصادی و معاشی ترقی کے نئے مواقع میں حصہ دار بن سکتا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں