The news is by your side.

Advertisement

ڈاکٹرز کو دھمکیاں : پی آئی سی کی او پی ڈی چھٹے روزبھی بحال نہ ہوسکی

لاہور : دل کے اسپتال پی آئی سی کی او پی ڈی چھٹے روزبھی بحال نہ ہوسکی، ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ دھمکیاں مل رہی ہیں سیکیورٹی کی عدم فراہمی کے باعث اوپی ڈی نہیں جائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق وکلا کے حملے کے بعد لاہور کے انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی ( پی آئی سی ) کی او پی ڈی سروس چھٹے روز بعد بھی بحال نہ ہوسکی، ڈاکٹروں نےانتظامیہ سے مزید سیکیورٹی کا مطالبہ کردیا۔

اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ اوپی ڈی کے علاوہ ایکسرے اور ٹیسٹ سمیت دیگر سروسز بھی تاحال معطل ہیں، مریض شدید پریشانی میں مبتلاہیں۔

لاہور میں پنجاب کے سب سے بڑے دل کے اسپتال کی او پی ڈی چھ روز بعد بھی بحال نہ ہوسکی۔ پی آئی سی پریذیڈنٹ وائی ڈی اے ڈاکٹر اعجاز نے الزام عائد کیا ہے کہ وکلا کی جانب سے مسلسل دھمکیاں مل رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ متعدد ڈاکٹراور عملہ ڈر کے باعث گھروں کو جا چکا ہے، رینجرز سیکیورٹی نہ ہونے کے باعث ہم او پی ڈی میں نہیں جارہے۔ ڈاکٹروں نے مزید سیکیورٹی کا مطالبہ کیا ہے۔

واضح رہے کہ پی آئی سی میں وکلا کی غنڈہ گردی کے بعد متاثرہ اسپتال میں مرمت کا کام دوروز بعد ہی مکمل کرلیا گیا تھا مگر اب تک صرف ایمرجنسی سروس ہی شروع کی جاسکی۔

اس کے علاوہ ایکسرے اور الٹراساؤنڈ سمیت کسی بھی قسم کے ٹیسٹ کی سروسز بھی معطل ہیں، سروسز کی معطلی سے مریض شدید پریشانی کاشکار ہیں۔ ڈاکٹراعجاز کے مطابق گرینڈ ہیلتھ الائنس کے اجلاس میں اوپی ڈی کھولنے کی حکمت عملی طے کریں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں