The news is by your side.

Advertisement

دھرنے اور انتشار کی سیاست کرنے سے ملک کی خدمت نہیں ہوتی، وزیر اعظم

شیخوپورہ: وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ 1500 دن میں انقلاب نہ لاسکنے والے 100 دنوں میں کیا کریں گے، دھرنے اور انتشار کی سیاست کرنے سے ملک کی خدمت نہیں ہوتی ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے کالا شاہ کاکو میں پل کا سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا، شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ 2020 تک ملک بھر میں موٹرویز کا جال بچھ چکا ہوگا، لاہور موٹروے پر شخص نے تنقید کی، ہر شخص تسلیم کرتا ہے پاکستان نے ترقی کرنی ہے تو موٹرویز کا جال بچھانا ہوگا۔

وزیر اعظم نے کہا کہ 2019 کے اختتام سے پہلے کراچی تک موٹروے پر سفر ہوگا، پاکستان نے اندرونی و بیرونی چیلنجز کا سامنا کیا، جتنی ترقی ان پانچ سال میں ہر شعبے میں ہوئی اتنی کسی دور میں نہیں ہوئی، 2013 میں ملک میں بجلی و گیس نہیں تھی، مہنگائی کا سیلاب تھا، صرف پانچ سال میں ہم نے 10 ہزار میگاواٹ کے منصوبے لگائے۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ ہمیشہ خدمت اور عزت کی سیاست کی کوشش کی، کسی کو گالی نہیں دی نہ الزام لگا کر پگڑی اچھالی، سیاست اور ووٹ کو ہمارے پلیٹ فارم سے عزت دی گئی، فاٹا میں انگریز کا نظام ختم کرکے پاکستانی قوانین لائے گئے ہیں، فاٹا انضمام کا بل دو تہائی اکثریت سے منظور ہوا، 70 سال میں کوئی نہ کرسکا اس کا سہرا بھی نواز شریف کے سر جاتا ہے۔

وزیر اعظم نے کہا ہے کہ ملکی ترقی ووٹ کا نتیجہ ہے، جولائی میں فیصلہ پھر آپ کے پاس آئے گا، فیصلہ عوام کے پاس تھا، ہمارا کام امانت میں خیانت نہ کرنا تھا، عوام جو فیصلہ کرے سیاست دانوں کو یہ پانچ سال کیلئے قبول کرنا ہوگا، جو فیصلہ عوام کرے آئین کے تحت اس کو قبول کرنا چاہئے، عوام کے فیصلے ملکی ترقی کا باعث بنیں گے۔

انہوں نے کہا کہ خوشی ہے کہ کالا شاکو کے لوگوں کا دیرینہ مطالبہ پورا کیا ہے، آپ کسی بھی حلقے میں چلے جائیں ن لیگ کے ترقیاتی کام نظر آئیں گے، موجودہ حکومت نے ریکارڈ مدت میں ترقیاتی منصوبے مکمل کئے، مسلم لیگ ن نے عوام سے کئے وعدے پورے کئے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں