The news is by your side.

Advertisement

معاشی سطح پر مزید خوشخبری، مہنگائی کے خلاف حکومتی اقدامات کے ثمرات سامنے آنے لگے

اسلام آباد: معاشی سطح پر مزید خوشخبری، مہنگائی کے خلاف حکومتی اقدامات کے ثمرات سامنے آنے لگے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر مہنگائی میں کمی سے متعلق حکومتی اقدامات کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ معاشی سطح پر مزید اچھی خبریں سامنے آرہی ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ مہنگائی کم کرنے کیلئے ہماری کوششوں کے نتائج سامنے آرہےہیں، حکومت کے آنے کےبعد سے افراط زر کی مجموعی شرح آج کم سطح پر ہیں۔

وزیراعظم کا اپنے ٹوئٹ میں کہنا تھا کہ میں نے اپنی معاشی ٹیم کو چوکنا رہنے اور مہنگائی کو کنٹرول میں رکھنے کو یقینی بنانے کی ہدایت کی ہے۔

دوسری جانب وفاقی وزیر اسد عمر نے بھی ملک میں مہنگائی میں کمی سے متعلق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام جاری کیا ہے۔

اسد عمر نے اپنے ٹوئٹ میں کہا کہ بنیادی افراط زر کی شرح پانچ اعشاریہ چار فیصد تک نیچے آچکی ہے، جنوری میں افراط زر حوصلہ افزا رہا، کنزیو پرائس انڈیکس اور اشیائے خورونوش کی مہنگائی مجموعی طور پر سات اعشاریہ چھ فیصد تک رہیں ۔وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی حکومت آنے سے پہلے افراط زر کی شرح سے آج کی افراط زر بہتر صورتحال میں ہے۔

واضح رہے کہ گذشتہ ماہ بھی مہنگائی سےمتعلق ایک رپورٹ جاری ہوئی تھی، جس کے مطابق دسمبر 2019 کے مقابلے میں 2020 کے دوران مہنگائی میں نمایاں کمی ہوئی، مہنگائی کی شرح بارہ اعشاریہ چھ سےکم ہو کر سات اعشاریہ نو آئی تھی۔

رپورٹ کے مطابق ٹیکس وصولی اور برآمدات میں ریکارڈ اضافہ دیکھا گیا، 2019 کے آخری مہینے میں مہنگائی 12.6 فی صد تھی، دسمبر 2020 میں کم ہو کر 7.9 فی صد رہ گئی۔

دسمبر 2019 میں ٹیکس وصولی 469 ارب، دسمبر 2020 میں 508 ارب ہوئی، ملک کو ترقی دینے والی برآمدات میں بھی نمایاں اضافہ ہوا، دسمبر 2019 میں برآمدات 1993 ملین ڈالر تھیں، دسمبر 2020 میں بڑھ کر 2357 ملین ڈالر تک پہنچ گئیں تھیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں