ملک چلانا مخالفین کا کام نہیں، وہ صرف کرکٹ ہی کھیل سکتے ہیں، نواز شریف -
The news is by your side.

Advertisement

ملک چلانا مخالفین کا کام نہیں، وہ صرف کرکٹ ہی کھیل سکتے ہیں، نواز شریف

اوکاڑہ: وزیر اعظم نواز شریف نے اوکاڑہ کے قصبے شیر گڑھ میں ریلوے اسٹیشن بنانے کا اعلان کردیا اور کہا ہے کہ ملک چلانا اور سیاست کرنا سیاسی مخالف کا کام نہیں، وہ صرف کرکٹ ہی کھیل سکتے ہیں جا کر کرکٹ کھیلیں۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم نواز شریف آج صوبہ پنجاب کے شہر اوکاڑہ پہنچے جہاں شیر گڑھ میں انہوں نے گندم کٹائی مہم کا افتتاح کیا۔ بعد ازاں اوکاڑہ میونسپل اسٹیڈیم میں انہوں نے عوامی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے شیر گڑھ کے لیے ریلوے اسٹیشن بنانے کا اعلان کیا۔

جلسے سے خطاب میں وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ہم اپنے ریلوے اسٹیشنز کو اپ گریڈ کر رہے ہیں۔ پاکستان بہت تیزی سے ترقی کر رہا ہے۔ ملک میں سڑکیں اور موٹر ویز بن رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ موٹر وے ملتان، سکھر اور پھر حیدر آباد تک جائے گی۔

وزیر اعظم نے ایک بار پھر لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کا وعدہ دہراتے ہوئے کہا کہ سنہ 2018 میں ملک سے لوڈ شیڈنگ مکمل طور پر ختم ہوجائے گی۔

مخالفین پر وار کرتے ہوئے وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ان کا کام احتجاج کرنا ہے، اور ہمارا کام عوام کی خدمت کرنا ہے۔ ہم سٹرکیں بناتے رہیں گے، وہ لوگ سٹرکیں ناپتے ہیں گے۔

وزیراعظم نے کہا کہ  اوکاڑہ کے جذبے کو دیکھ کر دل باغ باغ ہوگیا، اوکاڑہ کے لوگوں مانگو کیا مانگتے ہو؟ نواز شریف وعدہ کرتا ہے تو بھولتا نہیں،سابقہ جلسہ یاد ہے یا نہیں ؟اس جلسے میں کہا تھا  کہ اوکاڑہ سے موٹروے گزرے گی، موٹروے انشااللہ یہاں سے گزرے گی۔

انہوں ںے اعلان کیا کہ اوکاڑہ کا اسپتال 200 سے بڑھا کر 500 بیڈ کا کیا جارہا ہے، اوکاڑہ میں انڈسٹریل اسٹیٹ بنائیں گے، عوام کا جذبہ بتا رہا ہے کہ اوکاڑہ آئندہ بھی مسلم لیگ ن کا ہوگا۔

نواز شریف نے کہا کہ احتجاج کرنے والے کہتے ہیں کہ ملک میں لوڈ شیڈنگ ہورہی ہے، سال 2018 میں لوڈ شیڈنگ کا ہمیشہ کے لیے خاتمہ کردیا جائے گا، آنے والے دنوں میں ہر مہینے ایک کارخانہ تیار ہورہا ہے،اب جو بجلی آئے گی وہ پھر کبھی نہیں جائے گی، آپ کا فرض بنتا ہے لوڈ شیڈنگ کاعذاب دینے والوں سے سوال پوچھیں۔

انہوں نے کہا کہ  بجلی بھی ہم دے رہے ہیں،موٹر وے بھی ہم بنارہے ہیں، موٹروے کو لاہور سے ملتان، سکھر،حیدرآباد اورکراچی تک لے جارہے ہیں،بجلی آئے گی بھی اور عوام کو سستی بھی ملے گی،  ہم سٹرکیں بناتے جائیں گے وہ سٹرکیں ناپتے جائیں گے۔

انہوں ںے عمران خان کے گزشتہ روز کے جلسے پر تنقید کی اور کہا کہ مخالفین چھوٹے چھوٹے جلسے کررہے ہیں، ان کی جلسی اور ہمارا جلسہ، زمین آسمان کا فرق ہے۔

ہم اب ان کے کہنے پر استعفیٰ دیں گے؟

وزیراعظم نواز شریف نے پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ان کے پلے احتجاج کے سوا کچھ نہیں، ہر بات پر کہتے ہیں کہ استعفی دو، اب نواز شریف ان کے کہنے پر استعفیٰ دے گا؟

سیاست کرنا تمہارا کام نہیں، جا کر کرکٹ کھیلو

وزیراعظم نے کہا کہ یہ سیاست کرنا اور ملک چلانا تمہارا کام نہیں، تم صرف کرکٹ ہی کھیل سکتے ہو وہی کھیلو اور اب تو وہ بھی نہیں کھیل سکتے، جو کھیلنی تھی وہ کھیل لی، اللہ کے فضل سے ہم نے کرکٹ بھی کھیلی اور حکومت بھی کی۔

کل کے جلسے میں بہنیں  کیا کررہی تھیں؟

وزیراعظم نواز شریف نے تحریک انصاف کے کل کے جلسے میں موجود خواتین پر بھی تنقید کی اور کہا کہ یہ آج اس طرح کا جلسہ نہیں ہے جیسا مخالفین کا ہوتا ہے، یہاں موجود بہنوں کا شکریہ جو کونے میں کھڑی ہیں،کل بھی لوگوں نے ٹی وی پر دیکھا کہ بہنیں وہاں کیا کررہی تھیں؟

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں