پولیس کو پوکے مون گیم موبائل میں انسٹال نہ کرنے کا حکم ARYNews.tv
The news is by your side.

Advertisement

پولیس کو پوکے مون گیم موبائل میں انسٹال نہ کرنے کا حکم

لاہور: پولیس حکام نے پوکے مون گیم کو سیکیورٹی رسک قرار دیتے ہوئے پولیس اہلکاروں کو بھی یہ گیم کھیلنے سے روک دیا۔

A virtual map of Bryant Park is displayed on the screen as a man plays the augmented reality mobile game "Pokemon Go" by Nintendo in New York City

تفصیلات کے مطابق پولیس کو گیم سے خطرات لاحق ہیں،لاہور پولیس کو بھی گیم پوکے مون کھیلنے سے روک دیا گیا۔

pokemon-1

قبل ازیں پشاور پولیس اور پاک فضائیہ کو بھی اس گیم کو کھیلنے سے منع کیا گیا تھا اور اب پولیس کو اس ضمن میں ہدایات جاری کی گئی ہیں۔

pokemon-2

نیشنل ٹیلی کام اور آئی ٹی سیکیورٹی بورڈ کی جانب سے پولیس کو مطلع کیا گیا ہے کہ گیم کی ایپلی کیشن جی پی ایس سروس کو خود کار طریقے سے کنٹرول کرتی ہے اور فون کی فزیکل لوکیشن کو ہیک کرسکتی ہے.

poke

اس ایپلی گیشن سے موبائل میں تصاویر ،ویڈیوزتک رسائی ہوتی ہے،گیم سے ای میل، فون میں موجود نمبر اور لوکیشن کو بھی ہیک کیا جاسکتا ہے۔

wb-pok

اطلاعات کے مطابق گیم کو سیکیورٹی رسک قرار دیتے ہوئےافسران اور جوانوں اس گیم کو انسٹال نہ کرنے کی ہدایات پر مبنی نوٹی فکیشن جاری کردیا گیا ہے۔


یہ بھی پڑھیں: موبائل فون کی بیٹری جلد ختم کرنے والی وجوہات


قبل ازیں ہوم اپلائنس اور اسمارٹ فونز میں صف اول کی کمپنی سام سنگ نے بھی گزشتہ سال ایسی بیٹری بنانے کا اعلان کیا تھا جو ایک بار چارج ہونے کے بعد ایک ہفتے تک اسمارٹ فونز کو توانائی فراہم کرے گی تاہم اب تک ایسی کوئی بیٹری وہ فراہم نہ کرسکا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں