The news is by your side.

Advertisement

دہشت گرد جوکر رہے ہیں وہ مذہب نہیں‘ پوپ فرانسس

رباط: عیسائیوں کے مذہبی پیشوا پوپ فرانسس کا کہنا ہے کہ مذہب پرستی کی مخالفت کرنا ضروری ہے۔

تفصیلات کے مطابق رومن کیتھولک میسحیوں کے روحانی پیشوا پوپ فرانسس نے مراکش کے دارالحکومت رباط کی تاریخی مسجد میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گرد جوکر رہے ہیں وہ مذہب نہیں ہے۔

عیسائیوں کے مذہبی پیشوا پوپ فرانسس نے کہا کہ مذہب پرستی کی مخالفت کرنا ضروری ہے۔

رومن کیتھولک کے روحانی پیشوا پوپ فرانسس نے کہا ہے کہ لوگوں کوبہترزندگی گزارنے کے حق سے محروم نہیں رکھا جاسکتا۔

یاد رہے کہ 18 فروری 2017 کو پوپ فرانسس نے اپنی تقریر میں کہا تھا کہ تمام مذہب، امن کا پیغام دیتے ہیں اور تمام مذہبی افکار میں شدت پسندی کا خطرہ موجود رہتا ہے۔

کیتھولک مسیحوں کے روحانی پیشوا پوپ فرانسس کا کہنا تھا کہ اسلامی دہشت گردی کا کوئی وجود نہیں ہے۔

نیوزی لینڈ کی 2 مساجد میں فائرنگ‘ 49 افراد جاں بحق

واضح رہے کہ 15 مارچ کو نیوزی لینڈ کی دو مساجد میں دہشت گرد حملے کیے گئے جس کے نتیجے میں خواتین وبچوں سمیت 49 افراد جاں بحق اور 20 زخمی ہوئے تھے۔

مرکزی حملہ آور کی شناخت 28 سالہ برینٹن ٹیرنٹ کے نام سے ہوئی ہے اور وہ آسٹریلوی شہری ہے جس کی تصدیق آسٹریلوی حکومت نے کرکھی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں