یورپ میں تارکین وطن کو صحت کی بہتر سہولیات فراہم کی جائیں: اقوامِ متحدہ کی ہدایت
The news is by your side.

Advertisement

یورپ میں تارکین وطن کو صحت کی بہتر سہولیات فراہم کی جائیں: اقوامِ متحدہ کی ہدایت

نیویارک: اقوامِ متحدہ نے پورپین ممالک کو ہدایت کی ہے کہ پورپ میں بسنے والے تارکین وطن کو صحت کی بہتر سہولیات فراہم کی جائیں۔

تفصیلات کے مطابق پورپ میں پناہ لینے والے مہاجرین امراض کا شکار ہورہے ہیں، جبکہ ماضی کے مقابلے میں مرض میں بھی اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پورپ آنے والے نئے مہاجرین سے بیماریوں میں اضافہ ہورہا ہے، جو دوسروں میں منتقلی کا سبب بھی ہے۔

رپورٹ میں پورپین ممالک کو ہدایت کی گئی ہے کہ پناہ گزينوں اور مہاجرين کو بہتر طبی سہوليات فراہم کی جائیں تاکہ اس اہم مسئلے پر فوری طور پر قابو پایا جاسکے۔

مہاجرین کے ذریعے دیگر ممالک سے منتقل ہونے والی بیماریوں کا یورپ میں علاج موجود ہے، طبی سہولیات بڑھا دی جائیں تو اس پر فوری طور پر کنٹرول ممکن ہے۔

بحیرہ روم میں تارکین وطن کی کشتی الٹ گئی، 117 افراد کی ہلاکت کا خدشہ

ایک محتاط اندازے کے مطابق پورپ میں مکمل آبادی کا دس فیصد حصہ مہاجرین کا ہے، بہتر روزگار اور خوشگوار زندگی گزارنے کی خواہش لیے اب تک ہزاروں مہاجرین غیرقانونی طور پر یورپ داخلے کے دوران بحیرہ روم میں ڈوب کر ہلاک ہوچکے ہیں۔

خیال رہے کہ دو روز قبل ہی بحیرہ روم میں غیر قانونی طور پر یورپ جانے والی تارکین وطن کی کشتی ڈوبنے سے 117 مہاجرین ہلاک ہوگئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق سنہ 2018 میں یورپ جانے کی خواہش میں 2200 افراد بحیرہ روم میں ڈوب کر ہلاک ہوئے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں