The news is by your side.

Advertisement

انتخابات 2018 نے کراچی کی سیاست کا نقشہ بدل ڈالا ، بلے نے سب کی چھٹی کردی

کراچی : شہر قائد میں تحریک انصاف کے بلے نے سب کی چھٹی کردی، نہ فاروق ستار کی پتنگ اڑ سکی نہ ہی مصطفٰی کمال کامیاب ہوسکے جبکہ  شہباز شریف کو  بھی کراچی والوں نے مسترد کردیا اور  بلاول بھٹو  اپنے گڑھ لیاری میں ہار گئے۔

ور 14 سیٹیں لے کر کراچی کی سب سےبڑی جماعت بن گئی نہ فاروق ستار کی پتنگ اڑ سکی نہ ہی مصطفٰی کمال کامیاب ہوسکے جبکہ ن لیگ کے شہبازشریف کو بھی کراچی والوں نےمسترد کردیا اور بلاول بھٹو اپنے گڑھ لیاری میں ہارگئے۔

تفصیلات کے مطابق انتخابات 2018 نے کراچی کی سیاست کا نقشہ بدل دیا، کراچی کی قومی اسمبلی کی اکیس نشستوں کے غیرحتمی غیرسیاسی نتائج نے ایم کیو ایم پاکستان اور پیپلزپارٹی کی بنیادوں کو ہلادیا۔

کراچی میں تحریک انصاف نے سب سے زیادہ چودہ نشستیں حاصل کی بلکہ پیپلزپارٹی کا لیاری سے صفایا کردیا اور ایم کیو ایم کو عزیزآباد میں ہرا کر بڑا اپ سیٹ کردیا۔

کراچی والوں نے جہاں عمران خان کو بھاری اکثریت سے کامیاب کرایا وہیں پی ٹی آئی کے دیگر امیدواروں پر اعتماد کا اظہار کیا۔

این اے 243 سے عمران خان کو 94 ہزار سے زیادہ ووٹ ملے جبکہ ایم کیوایم کے علی رضاعابدی صرف24 ہزار ووٹ لے سکے۔

پی ٹی آئی کے امیدوارفیصل واوڈا نے این اے 249 سے مسلم لیگ ن کے صدر شہبازشریف کو شکست سے دو چار کیا تو عامر لیاقت حسین نے ایم کیو ایم پاکستان کے سینئر رہنما ڈاکٹر فاروق ستار کو شکست دی۔

حلقہ این اے 244 سے پی ٹی آئی رہنما کے علی زیدی نے ن لیگ کےمفتاح اسمعیل کوہرادیا جبکہ این اے 247 میں پی ٹی آئی رہنما عارف علوی نے ایم کیوایم کے رہنما فاروق ستار کو شکست دیدی۔

ایم کیوایم کو کراچی سے قومی اسمبلی کی صرف چارسیٹیں ملیں پاک سرزمین پارٹی ایک بھی سیٹ حاصل نہ کرسکی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں