اسلامی فوجی اتحاد کے قیام کا مقصد دہشت گردی کا خاتمہ ہے، جنرل راحیل شریف -
The news is by your side.

Advertisement

اسلامی فوجی اتحاد کے قیام کا مقصد دہشت گردی کا خاتمہ ہے، جنرل راحیل شریف

ریاض: پاک فوج کے سابق سپہ سالار اور اسلامی فوجی اتحاد کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے کہا ہے کہ سعودی عرب کے فوجی اتحاد کا بنیادی مقصد دہشت گردی کا خاتمہ کرنا ہے۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی گزشتہ روز 5 روزہ سرکاری دورے پر 8 رکنی وفد کے ہمراہ سعودی عرب پہنچے، کنگ خالد  ائیرپورٹ ریاض پر سعودی شوریٰ کونسل  کے اسسٹنٹ اسپیکر ڈاکٹر عبداللہ الثمن، سعودی سفیر نواف المالکی اور قائم مقام سفیر ذیشان احمد سمیت دیگر حکام نے پاکستانی وفد کا استقبال کیا۔

چیئرمین سینیٹ اپنے وفد کے ہمراہ اسلامی فوجی اتحاد برائے انسداد دہشت گردی (IMCTC) کے ہیڈکوارٹر پہنچے جہاں اُن کا استقبال کمانڈر جنرل راحیل شریف نے کیا۔

جنرل راحیل شریف نے اسلامی اتحاد کی کارکردگی اور اغراض و مقاصد پر بریفنگ دی۔ انہوں نے بتایا کہ ’اس ادارے کے قیام کا بنیادی مقصد دہشت گردی کا خاتمہ اور اس کا مقابلہ کرنا ہے‘۔ اسلامی اتحاد کے سربراہ کا کہنا تھا کہ ’یہ فوج کسی ملک، قوم، فرقے کے خلاف کارروائی کے لیے نہیں بنائی گئی‘۔

مزید پڑھیں: پاکستانی فوج دنیا کی عظیم فوج ہے ، سابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف

سینیٹ کے چئیرمین نے اپنے وفد کے ہمراہ  ریاض میں قائم سعودی شوریٰ کونسل کے اسپیکر عبداللہ بن محمد الشیخ سے ملاقات کی جس میں پاک سعودی فرینڈ شپ گروپ کے سربراہ عبداللہ الحربی اور دیگر ارکان  بھی موجود تھے۔

دوران ملاقات دو طرفہ تعلقات اور باہمی دلچسپی سمیت دیگر امور پر تفصیلی گفتگو ہوئی۔ اس موقع پر چیئرمین سینیٹ کا کہنا تھا کہ ’سعودی عرب نے مشکل کی ہر گھڑی میں پاکستان کا ساتھ دیا، پاکستانی عوام اور حکومت سعودی حکومت کے اقدامات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے‘۔

اس موقع پر پاکستانی وفد نے شوریٰ کی براہ راست کارروائی بھی دیکھی۔

بعد ازاں صادق سنجرانی نے مسک فاؤنڈیشن کے مرکزی دفتر کا دورہ کیا جہاں اُن کا استقبال سربراہ بدرالدین قاحیل نے کی اور ادارے کے اغراض و مقاصد سے آگاہ کیا۔

یہ بھی پڑھیں: سعودی عرب: اسلامی فوجی اتحاد کا افتتاحی اجلاس، راحیل شریف کا خطاب

بدرالدین نے بتایا کہ ’سعودی ولی عہد محمد بن سلمان مسک فاؤنڈیشن کے بانی ہیں، اس ادارے کے قیام کا مقصد سعودی نوجوانوں کو مستقبل کے چیلنجز سے نمٹنے کے لیے تیار کرنا اور انہیں مختلف شعبوں میں تربیت دینا ہے۔

چئیرمین سینیٹ نے ولی عہد محمد بن سلمان کے وژن 2030 کی تعریف کی اور اس خواہش کا اظہار کیا کہ پاکستانی نوجوانوں کو بھی اس کاوش میں شامل کیا جائے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں