The news is by your side.

Advertisement

آسمان پر’ آگ سے بنی انگھوٹی’ جیسا منظر ، پاکستان میں کب نظر آئے گا؟

کراچی : رواں سال کا دوسرا سورج گرہن اکیس جون کو ہوگا، سورج گرہن کے دوران آسمان پر آگ سے بنی انگھوٹی جیسا منظر ہوگا، اس کا نظارہ پاکستان سمیت دیگرملکوں میں کیا جاسکے گا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان میں سال کا دوسرا سورج گرہن کا نظارہ اکیس جون کو دکھائی دے گا، محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ جزوی سورج گرہن کا آغاز پاکستانی وقت کے مطابق صبح نو بج کر چھبیس منٹ پر ہوگا جبکہ 10 بج کر59منٹ پر گرہن نقطہ عروج ہوگا اور 12 بج کر 46منٹ پر ختم ہوگا، اس کا دورانیہ 3 گھنٹہ 2 منٹ رہے گا ۔

ڈائیریکٹرانسٹیٹیوٹ آف اسپیس اینڈ پلنٹری اسٹرو فزکس جاوید اقبال کا کہنا ہے کہ یہ بہت کم دیکھاجانے والا سورج گرہن ہوگا، سورج گرہن کے دوران آسمان پر آگ سے بنی انگھوٹی جیسا منظر ہوگا، اسے براہ راست دیکھنے سے بینائی سے محروم ہونے کا خدشہ ہے۔

ماہر ین فلکیات کا کہنا تھا کہ پاکستان میں گوادر سے سکھر تک کے مختلف علاقوں میں سورج کے گرد روشنی کا ہالہ یعنی رنگ آف فائر دیکھا جاسکے گا۔

ماہرین کے مطابق سورج گرہن اس سے قبل دسمبر2019 میں 79سے80 فیصد دیکھا گیا تھا جبکہ اس بار 91 فیصد تک سورج کو گرہن لگ سکتا ہے، سورج گرہن کا نظارہ پاکستان سمیت یورپ، ایشیا کے زیادہ ترحصوں میں،آسٹریلیا،افریقا، جنوبی امریکا سمیت دیگر ممالک میں کیا جاسکے گا۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ سورج گرہن کے دوران سیلفی لینے کی کوشش نقصان دہ ہوسکتی ہے، عام سن گلاسز کے بجائے خصوصی ڈیزائن کردہ سولر فلٹر گلاسز استعمال کیے جائیں جو مہلک شعاعوں کو روکتے ہیں،کیمرے کے لینس کے لیے بھی خصوصی طور پر تیار کردہ فلٹر استعمال کیا جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں