The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: سوشل میڈیا پر اشتہارات کے قوانین بنانے کا مطالبہ

ریاض: سعودی عرب میں مجلس شوریٰ کے ارکان نے مطالبہ کیا ہے کہ سوشل میڈیا پر چلائے جانے والے اشتہارات کے قوانین اور اسپیشل فریم ورک تیار کیا جائے۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی مجلس شوریٰ کے متعدد ارکان نے خبردار کیا ہے کہ سوشل میڈیا کی بعض شخصیات نے سماجی رابطے کے وسائل کو تنازعات اور ایک دوسرے کو بدنام کرنے والے اسٹیج میں تبدیل کر دیا ہے۔ یہ سوشل میڈیا پر غیر اخلاقی پروگرام کر رہے ہیں۔

ارکان شوریٰ کا کہنا تھا کہ ہمارے پڑوسی ملک میں بھی سوشل میڈیا شخصیات کی غیر اخلاقی سرگرمیاں ریکارڈ پر آئی ہیں، تحقیقات سے پتہ چلا ہے کہ کئی معروف شہری منی لانڈرنگ اور حد سے زیادہ دولت بٹورنے میں ملوث پائے گئے ہیں۔

ارکان نے مطالبہ کیا کہ سوشل میڈیا کی معروف شخصیات کو کنٹرول کرنے کے لیے اسپیشل فریم ورک تیار کیا جائے اور اشتہارات کا ایسا قانون تیار کیا جائے جس کے ذریعے گمراہ کن طریقے سے دولت کمانے کا سلسلہ بند ہو۔ انفارمیشن کرائمز کا سدباب ہو اور اشتہارات کی دنیا میں نظر آنے والی لاقانونیت کو روکا جا سکے۔

شوریٰ کے ارکان نے توجہ دلائی کہ سوشل میڈیا کی بعض شخصیات بعض اشیا کا تعارف پرفریب طریقے سے کرواتی ہیں جس سے صارفین گمراہ ہوتے ہیں۔ انہیں پتہ نہیں ہوتا کہ معاشرے کی یہ معروف ہستیاں اشیا کے تعارف کے نام پر پروپیگنڈہ کر رہی ہوتی ہیں اور متعلقہ کمپنیوں سے اشتہار کی رقم وصول کیے ہوتی ہیں۔

ارکان شوریٰ نے مزید کہا کہ ای بزنس سسٹم کو مؤثر کیا جائے جس میں تجارتی لین دین کے لیے ضروری تحفظ مہیا ہو، اس کے تحت دھوکہ دہی والے اشتہارات کا مسئلہ حل کیا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں