تازہ ترین

برطانوی وزیراعظم کا پھر غزہ جنگ بندی کا مطالبہ کرنے سے انکار

برطانوی وزیراعظم رشی سنک نے ایک بار پھر غزہ میں جنگ بندی کا مطالبہ کرنے سے انکار کر دیا ہے۔

بدھ کو ہاؤس آف کامنز میں ایک سوالیہ نشست میں، لیبر پارٹی کے قانون ساز مارک ہینڈرک نے سنک سے پوچھا کہ کیا وہ یورپی یونین کے خارجہ امور کے سربراہ جوزپ بوریل سے اتفاق کرتے ہیں جنہوں نے کہا کہ اسرائیل بھوک کو جنگ کے ایک آلے کے طور پر استعمال کر رہا ہے۔

سنک نے اپنے ردعمل میں کہا کہ اسرائیل کو غزہ میں مزید امداد کی اجازت دینی چاہیے برطانیہ مزید امداد حاصل کرنے اور اس بگڑتے ہوئے بحران کو روکنے کے لیے ہر ممکن کوشش کر رہا ہے ہم عوام کو جس تکالیف کا سامنا ہے اس کو دور کرنے کے لیے ہر ممکن کوشش کریں گے۔

ہینڈرک نے وزیر اعظم سے یہ بھی پوچھا کہ کیا وہ بوریل اور امریکی صدر جو بائیڈن سے اتفاق کرتے ہیں کہ جنگ بندی کی ضرورت ہے؟

سنک نے کہا کہ اس ہفتے اقوام متحدہ کی حمایت یافتہ رپورٹ کے نتائج شمالی غزہ میں "قحط” کے بارے میں انتباہ "شدید تشویشناک” ہیں ہمیں قحط سے بچنے کے لیے فوری اقدامات کی ضرورت ہے۔

اسرائیل کو برطانیہ کے ہتھیاروں کی فروخت کے بارے میں سوال کا جواب دیتے ہوئے، وزیر اعظم نے کہا کہ "بہت زیادہ” شہری ہلاکتیں ہوئی ہیں اور برطانیہ چاہتا ہے کہ اسرائیل "اپنی کارروائیوں کو فوجی اہداف تک محدود کرنے کے لیے زیادہ احتیاط سے کام لے۔

Comments

- Advertisement -