دبئی میں پہلی بار ’ تبدیلیؑ گٹھنے‘ کا آپریشن روبوٹس نے کیا robotic-knee-replacement
The news is by your side.

Advertisement

دبئی میں پہلی بار گھٹنے کی تبدیلی کا آپریشن روبوٹس نے کیا

دبئی : مقامی اسپتال میں پہلی بار دو خود کار روبوٹس نے گھٹنوں کی تبدیلی کا کامیاب آپریشن کیا۔ مریض تیزی سے روبہ صحت ہے۔

تفصیلات کے مطابق دبئی کے مقامی اسپتال میں دو روبوٹس نے ایک سرجن کی زیر نگرانی گھ‌ٹنے کی تبدیلی کا آپریشن کامیابی سے سرانجام دے کر سب کو ورطہ حیرت میں ڈال دیا ہے۔

بین الااقوامی خبر رساں ایجنسی کے مطابق سرجن علی البلوشی نے پریس کانفرنس میں بتایا ہے کہ متحدہ عرب امارات میں مصنوعی ذہانت (Artificial Intelligence) کی مدد سے گھٹنے کی تبدیلی کی سرجری کی گئی جس میں دو روبوٹس کی معاونت حاصل تھی۔

انہوں نے کہا کہ مصنوعی ذہانت کا استعمال دنیا بھر میں کامیابی سے کیا جا رہا ہے کیوں کہ اس میں غلطی کے امکان نہایت کم ہوتے ہیں جب کہ اعضاء کی پیوند کاری بھی کمال مہارت سے پایہ تکمیل کو پہنچ جاتی ہے اور یہ کم لاگت بھی ہوتی ہے چنانچہ پہلی مرتبہ اس ٹیکنالوجی کو دبئی میں استعمال کیا گیا۔

اس موقع پر 47 سالہ مریض احمد الرئیس نے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ہڈیوں کے بھر بھرے پن کی بیماری کی وجہ سے میرے گھٹنے ناکارہ ہو گئے تھے جس کے باعث مجھے چلنے پھرنے میں مشکل کا سامنا تھا تاہم اب گھٹنوں کی تبدیلی کے بعد میں دوبارہ سے چہل قدمی کے قابل ہو گیا ہوں۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے زیر لب مسکراتے ہوئے بتایا کہ جب مجھے پتہ چلا کہ سرجری روبوٹس کریں گے تو میں پریشان ہو گیا تھا کیوں کہ ایسا پہلی مرتبہ ہونے جا رہا تھا تاہم جب سرجن نے بتایا کہ وہ بھی وہاں موجود ہوں گے تو کافی ڈھارس بندھی اور میں اس طریقہ علاج کے لیے راضی ہو گیا۔

خیال رہے کہ وٹامن ڈی اور کیلشیم کی کمی کی وجہ سے ہڈیاں بھربھرے پن کا شکار ہو جاتی ہیں جس کے باعث ہڈیوں کے جوڑ بالعموم اور گھٹنے بالخصوص کے درمیان لچکدار مواد ختم ہوجاتا ہے جس سے کنارے گِھس جاتے ہیں اور پیر موڑنے میں یا اٹھے بیٹھنے میں شدید تکلیف ہوتی ہے جس کا پائیدار علاج گھٹنے کی تبدیلی کا آپریشن ہی ہے.


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں