ہفتہ, مئی 25, 2024
اشتہار

تاریخ میں پہلی مرتبہ روسی فوجی طیارے چین میں اتر گئے

اشتہار

حیرت انگیز

مغربی دنیا کے ساتھ کشیدگی کے درمیان روس اور چین کی مشترکہ فوجی مشقیں جاری ہیں، دونوں ممالک کی فضائی افواج نے ایشیا پیسیفک میں مشترکہ فوجی مشقوں میں حصہ لیا۔

اس حوالے سے روسی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ ان مشقوں کا مقصد ماسکو اور بیجنگ کے درمیان مغرب کیخلاف اتحاد کا ثبوت دینا ہے۔،

روسی عہدیدار نے کہا کہ مذکورہ مشقوں کے موقع پر روسی طیارے تاریخ میں پہلی مرتبہ چین میں اترے، اور اسی طرح کی مشقوں میں چینی طیارے بھی روسی فیڈریشن کی سرزمین پر اترے۔

- Advertisement -

China to Join Russia Military Exercises as U.S. Rivals Deepen Ties - WSJ

ترجمان روسی وزارت دفاع کا مزید کہنا ہے کہ ماسکو بیجنگ کے ساتھ تعلقات کو خصوصی اہمیت دیتا ہے، دونوں ممالک کے مسملہ عزائم ہیں کہ کسی صورت امریکا کی قیادت قبول نہیں کریں گے۔

یاد رہے کہ گزشتہ چند مہینوں میں یوکرین پر روسی حملے اور تائیوان کے لیے امریکی حمایت کے سبب پیدا ہونے والی کشیدگی کے درمیان چین اور روس کے دفاعی تعلقات مزید مضبوط ہورہے ہیں۔

چین نے یوکرین کی جنگ کے لیے مغرب کی ”اشتعال انگیزی” کو مورد الزام ٹھہرایا اور ماسکو پر مغربی ممالک کی پابندیوں کی بھی کھل کر مخالفت کا اظہار کیا ہے۔

China, Russia jets conducted patrol as Quad leaders met in Tokyo | Military  News | Al Jazeera

ادھر ماسکو نے بھی ایوان کی اسپیکر نینسی پیلوسی کے دورہ تائیوان سے پیدا ہونے والی کشیدگی کے دوران بیجنگ کی حمایت کی، واضح رہے کہ چین تائیوان کو اپنی ہی سرزمین کا ایک حصہ سمجھتا ہے۔

اس ماہ کے اوائل میں روسی صدر ولادیمیر پوٹن نے تائیوان کی کشیدگی کا موازنہ یوکرین کی جنگ کے ساتھ کرتے ہوئے کہا تھا کہ کییف اور تائی پے کے لیے امریکی حمایت عالمی عدم استحکام کو ہوا دینے کی کوششوں کا ایک حصہ ہے۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں