The news is by your side.

Advertisement

روس کا پہلی بار یوکرین جنگ میں جانی اور مالی نقصان کا اعتراف

ماسکو : روس کا پہلی بار یوکرین جنگ میں جانی اور مالی نقصان کا اعتراف کرتے ہوئے کہ کچھ روسی فوجیوں کو قیدی بنالیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق روسی وزارت دفاع کے ترجمان میجر جنرل ایگورکوناشینکوف نے یوکرین جنگ میں روسی افواج کو پہنچنے والے نقصانات کا اعتراف کرتے ہوئے کہا روسی افواج کا جانی نقصان دشمن سے کئی گنا کم ہے۔

میجر جنرل کوناشینکوف کا کہنا تھا کہ کچھ روسی فوجی لڑائی میں دشمن کی قید میں چلے گئے ہیں۔

ترجمان وزارت دفاع نے ہلاک روسی فوجیوں کی واضح تعداد بتانے سے گریز کرتے ہوئے کہا روسی افواج خصوصی آپریشن میں ہمت وبہادری کامظاہرہ کررہے ہیں۔

خیال رہے روسی افواج کی جانب سے یوکرین میں فوجی آپریشن پانچویں روز بھی جاری ہے ، لڑائی میں کئی گھنٹے تعطل کے بعد کیف اور خارکیف میں دھماکے سنے گئے۔

دارالحکومت کیف مکمل طور پر روسی فوج کے گھیرے میں ہیں اور شہر کے داخلی ور خارجی راستے بند کردیئے گئے ہیں۔

میئر کیف نے تصدیق کی ہے کہ روسی افواج شہر پر تمام اطراف سے گولہ باری کر رہی ہیں، یوکرینی فضائیہ نے جوابی کارروائی کرتے ہوئے روسی فوج کے قافلوں پر ڈرون حملے کئے۔

یاد رہے یوکرین بیلاروس کی سرحد پر روس سے مذاکرات کیلئے تیار ہوگیا ہے ، یوکرینی صدر ولودیمیر زیلنسکی کا کہنا ہے کہ یوکرین اور روسی وفود پیشگی شرائط کے بغیر ملاقات کریں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں