The news is by your side.

یوکرین میں کسی بھی ملک کی مداخلت کا فوری جواب دیا جائیگا، روس کا انتباہ

روسی صدر ولادیمیر پوتن نے ایک بار پھر سے خبردار کیا ہے کہ جو بھی ملک یوکرین میں مداخلت کرنے کی کوشش کرے گا اسے ماسکو کی جانب سے سخت ردعمل کا سامنا کرنا پڑے گا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق سینٹ پیٹرزبرگ میں قانون سازوں سے خطاب کرتے ہوئے روسی صدر پیوٹن نے کہا کہ روس کی اسٹریٹیجک سیکیورٹی کو خطرے کی صورت میں کریملن کی جانب سے کیا ردعمل ظاہر کیا جائے گا اس بارے میں تمام فیصلے پہلے ہی کر لیے گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اگر کوئی یوکرین میں جو کچھ ہورہا ہے اس میں باہر سے مداخلت کرنا چاہتا ہے تو اسے یہ جاننا ہوگا کہ روس کا ردعمل اور تیز ہوگا۔

روسی صدر نے کہا کہ ہمارے پاس ہر طرح کے ہتھیار ہیں جو مغرب حاصل نہیں کرسکتا، ہم اپنے ہتھیاروں پر فخر نہیں کریں گے لیکن ضرورت پڑنے پر ہم ان کا استعمال ضرور کریں گے اور میں چاہتا ہوں کہ ہر کوئی اسے جان لے۔

ساتھ ہی روسی صدر نے زور دیا کہ روس یوکرین میں خصوصی فوجی آپریشن کے لیے مقرر کردہ اہداف حاصل کرے گا۔ صدر پوتن نے زور دے کر کہا کہ ہمارے فوجی اور افسران، نیز دونباس ملیشیا، بہادری سے اپنا فرض ادا کر رہے ہیں۔ تمام مقاصد پورے کیے جائیں گے۔

یاد رہے روس کا یہ بیان برطانیہ کے اس بیان جواب میں آیا ہے جس میں برطانوی وزیر دفاع جیمز ہیپی نے کہا تھا کہ یوکرینی فوج کی کارروائیاں جائز ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں