The news is by your side.

Advertisement

امریکیوں کو جھاڑو پر سوار ہو کر خلا میں جانے کا مشورہ

ماسکو: روس کی جانب سے یوکرین پر حملے کے بعد دنیا بھر سے روس پر پابندیاں عائد کی جارہی ہیں، جواباً روس نے بھی کئی ممالک سے اپنی تجارت و اشتراک بند کردیا ہے۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق روس نے امریکی کمپنیوں کو راکٹوں کی فروخت بند کردی ہے، روسی اسپیس ایجنسی کے سربراہ دیمتری روگوزِن کا کہنا تھا کہ امریکا کو لانچ فراہم کرنے والوں کو خلا کے لیے اپنی جھاڑوؤں پر سوار ہونا چاہیئے۔

یاد رہے کہ روس 1990 کی دہائی کے وسط سے آر ڈی 180 انجنوں کی فروخت اور مرمت کر رہا ہے، یہ انجن یونائیٹڈ لانچ ایلائنس ایٹلس فائیو راکٹ میں استعمال ہوتا ہے۔ اب تک فراہم کیے جانے والے 122 انجنوں میں سے 98 استعمال کیے جا چکے ہیں۔

روگوزِن نے روسی ریاستی ٹیلی وژن پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس صورتحال میں ہم امریکا کو اپنے دنیا کے بہترین راکٹ انجن نہیں مہیا کر سکتے، انہیں کسی اور چیز پر اڑنے دیں، ان کی چھاڑوؤں پر۔

یونائیٹڈ لانچ ایلائنس پہلے ہی ایٹلس فائیو میں آر ڈی 180 انجنوں کو تبدیل کرنے پر کام شروع کر چکی ہے، ادارے کی جانب سے 2014 میں بلیو اوریجن کے بی ای ۔ 4 کے انجنوں کے متعلق معاہدوں پر دستخط ہوئے ہیں۔

امریکا کو انجنوں کی فروخت کے ساتھ روس، جرمنی کے ساتھ مشترکہ پروجیکٹ اور یورپی اسپیس ایجنسی کے ساتھ لانچ معاہدے سے پیچھے ہٹ گیا ہے۔

اس کے علاوہ روس نے امریکا کو انٹرنیشنل اسپیس اسٹیشن کو ختم کرنے کی دھمکی بھی دی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں