The news is by your side.

Advertisement

وفاقی حکومت نے جو فیصلے کیے ان پر عمل کریں گے ، سعید غنی

کراچی : وزیر تعلیم سندھ سعیدغنی کا کہنا ہے کہ وفاقی حکومت نےجوفیصلےکیےان پرعمل کریں گے، شہریوں نے ذمے داری کا ثبوت نہیں دیا توحالات اورخراب ہوسکتےہیں۔

تفصیلات کے مطابق وزیر تعلیم سندھ سعیدغنی نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام باخبر سویرا میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وفاقی حکومت نے جو فیصلے کیے ان پرعمل کریں گے اور ایس اوپیزپرسختی سےعمل کرائیں گے۔

وزیر تعلیم سندھ کا کہنا تھا کہ خدانخواستہ اگر حالات زیادہ خراب ہوئے تو صوبہ مزید اقدامات کرے گا، اقدامات پروفاقی حکومت اور صوبوں کو اعتماد میں لیں گے ، ابھی بھی حالات ہمیں خرابی کی طرف جاتےنظرآرہےہیں۔

سعید غنی نے مزید کہا کہ شہریوں نے ذمےداری کاثبوت نہیں دیا توحالات اورخراب ہوسکتےہیں۔

گذشتہ روز وزیر تعلیم سندھ کا کہنا تھا کہ میں نےپہلےدن کہاتھامیرابس چلےلوگوں کوگھروں میں بندکردوں، سندھ نےسب سےپہلےلاک ڈاؤن کیا جس کےاثرات دیکھ سکتےہیں، سندھ کےلاک ڈاؤن کےبعددیگرصوبےلاک ڈاؤن کی طرف گئے۔

سعید غنی نے کہا کہ سندھ کےساتھ اب بھی پنجاب کےپی نےلاک ڈاؤن کی حمایت کی، ہم مکمل طورپرلاک ڈاؤن نہیں کرپارہےلوگوں باہر نکلتےہیں، یہ وقت کوروناکی وبا کا پھیلاؤ روکنے اور لوگوں کو بچانے کا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس وقت جوفیصلہ کیاگیاہےوہ پاپولرفیصلہ نہیں ہے، پاپولرنہیں ہےتواس کامطلب اس فیصلےسےسب متفق نہیں ہیں، ہم نےمریض کوٹریک کیاتووہ کن لوگوں سےملاٹریس کرتےہیں۔

صوبائی وزیر نے کہا کہ باجماعت نماز سے متعلق علمائے کرام سے کل مشاورت ہوگی، تمام چیزوں کے ایس او پیز بنا رہے ہیں، جن پر سختی سے عمل کرائیں گے، تکلیف بھی ہے اور نقصان بھی ہورہاہے، ہم نے لاک ڈاؤن کے فیصلے مجبوری میں کیے تھے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ہمیں کوشش کرنی ہےایساراستہ نکلےکہ کام چل جائے، لوگوں کی حفاظت کےساتھ کاروبارکوبھی دیکھناہے، معلوم ہے، مسائل ہیں لیکن سوچ سمجھ کرفیصلےکرنا ہوں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں