The news is by your side.

Advertisement

آغا سراج درانی کے گھر کی خواتین کو حبس بے جا میں رکھا گیا، سعید غنی

کراچی : سندھ کے وزیر بلدیات سعید غنی نے کہا ہے کہ چھاپے کے دوران آغا سراج درانی کے گھر کی خواتین کو حبس بےجا میں رکھا گیا ہے، اہلخانہ سے ملاقات کی اجازت نہیں دی جارہی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے، کراچی میں اسپیکر سندھ اسمبلی کے گھر نیب ٹیم کی آمد کے موقع پر گھر کے باہر احتجاج کرتے ہوئے کیا، اے آر وائی نیوز کے پروگرام پاور پلے میں میزبان ارشد شریف سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

سعید غنی نے کہا کہ ابھی انکوائری چل رہی ہے اور آغاسراج درانی کو گرفتار کرلیا گی، اس طرح تو وفاقی حکومت کے لوگوں کو بھی انکوائریوں پر گرفتار کرلینا چاہیے۔

سعید غنی نے کہا کہ اس وقت سب سے اہم صورتحال آغا سراج درانی کے گھر کے اندر ہے، اہلخانہ سے ملاقات کی اجازت نہیں دی جارہی، فیملی ڈاکٹر کو بلایا گیا ہے مگر اسے اندر جانے کی اجازت نہیں دی جارہی ان کے گھر کی خواتین کو چھ گھنٹے سے گھر میں حبس بےجامیں رکھاگیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سیاسی انتقامی کارروائیاں کرنی ہیں تو ایک حد تک ہونی چاہیئں، گھر میں غیرقانونی حراست میں رکھ کر دباؤ ڈالنے کی کوشش کی جارہی ہے، اہلخانہ کو خواتین سے ملنے کی اجازت دی جائے۔

وزیر بلدیات کا مزید کہنا تھا کہ دو صوبائی خواتین وزرا کو بھی گھر کے اندر جانے کی اجازت نہیں دی گئی، نیب کو تحقیقات سے نہیں روکا جارہا، صرف اہلخانہ سے رابطہ کرنے دیا جائے، پوری سندھ حکومت آغاسراج درانی کی گھر کے باہر دھرنا دیئےبیٹھی ہے، جب ایک اسپیکرکے ساتھ ایسا رویہ رکھا جاسکتا ہے تو سوچیں مزید کیا کیا ہوسکتا ہے؟

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں