The news is by your side.

Advertisement

بڑا نقصان، کرونا ٹیسٹ کے لیے جمع سیکڑوں سیمپلز بارش کے پانی میں بہہ گئے

بہار: بھارتی ریاست بہار کے ایک اسپتال میں کو وِڈ 19 کے ٹیسٹ کے لیے جمع کیے گئے سیکڑوں سیمپلز بارش کے پانی میں بہہ گئے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق بہار کے ضلع آرا میں صدر اسپتال میں بارش کی وجہ سے پانی بھرنے کے باعث کرونا کی جانچ کے لیے جمع شدہ سیکڑوں سیمپل ضایع ہو گئے۔

اسپتال میں موجود تقریباً 300 سیمپلز 5 اور 6 جولائی کو لائے گئے تھے، تاہم ضلع میں لگاتار بارشوں کے باعث صدر اسپتال میں پانی بھر گیا تھا، اسپتال انتظامیہ نے سیمپلز کی حفاظت کی خاطر انھیں آئس باکس میں رکھ دیا تھا۔

بھارت میں لاپرواہی کی بدترین مثال، کرونا مریض کی لاش کسی اور خاندان کے حوالے

بارش کی وجہ سے اسپتال کے اندر میڈیکل، سرجیکل وارڈ اور او پی ڈی کے سامنے ایک فٹ پانی کھڑا ہو گیا تھا، جسے پمپ لگا کر باہر نکالا گیا، تاہم پانی نکالے جانے کے بعد معلوم ہوا کہ کو وِڈ نائنٹین کے لیے لائے گئے سیمپل پانی میں بہہ چکے ہیں۔

اسپتال میں پانی بھرنے سے مریضوں اور تیمارداروں کو بھی شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔

واضح رہے کہ ریاست بہار میں کرونا وائرس کی وبا تیزی سے پھیلتی جا رہی ہے، دن بہ دن ریاست میں کرونا کیسز بڑھتے جا رہے ہیں، اب تک بہار میں کرونا کے 14 ہزار 575 کیسز کی تصدیق کی جا چکی ہے، وائرس انفیکشن سے 119 مریض ہلاک بھی ہو چکے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں