spot_img

تازہ ترین

کراچی میں موسلا دھار بارش کا کوئی امکان نہیں، چیف میٹرولوجسٹ

چیف میٹرولوجسٹ سردار سرفراز نے کہا ہے کہ کراچی...

ایاز صادق قومی اسمبلی کے اسپیکر منتخب

مسلم لیگ ن کے سردار ایاز صدیق قومی اسمبلی...

کمالیہ: بارش میں گھر کی چھت گر گئی، ماں باپ اور بیٹا جاں بحق

کمالیہ کے علاقے فاضل دیوان میں مسلسل اور تیز...

حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں اضافہ کردیا

نگراں حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں 4 روپے...

2013 میں پیپلزپارٹی چھوڑنا سیاسی غلطی تھی: سابق وزیر صمصام بخاری کا تہلکہ خیز انٹرویو

سابق وزیر اور استحکام پاکستان پارٹی کے رہنما سید صمصام بخاری نے کہا ہے کہ 2013 میں پیپلز پارٹی چھوڑنا سیاسی غلطی تھی۔

استحکام پاکستان پارٹی (آئی پی پی) کے رہنما صمصام بخاری نے اے آر وائی نیوز سے انٹرویو میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مجھے پیپلز پارٹی نہیں چھوڑنی چاہی تھی اختلاف رکھتا اور الیکشن بھی نہ لڑتا لیکن پیپلزپارٹی نہ چھوڑتا۔

 صمصام بخاری نے کہا کہ 2013 میں ن لیگ میں شمولیت کی آفر تھی میں  نے نہیں مانی، دوسری غلطی یہ تھی پیپلزپارٹی چھوڑنی تھی تو ن لیگ کی آفرمان لیتا، پی ٹی آئی چھوڑنے کے فیصلے میں جتنی تاخیر کرسکتا تھا کرتا رہا۔

انہوں نے کہا کہ اللہ کرے یہ الیکشن لوگوں کو قابل قبول ہوں، ایک کے سوا تمام جماعتوں کا جھگڑا 9 فروری کو ختم ہوجائے گا، یہ جماعتیں 10 فروری کو حکومت سازی کا عمل شروع کردیں گے، الیکشن کے بعد ملک کے وسیع تر مفاد میں سب اکٹھے ہوجائیں گے۔

 صمصام بخاری نے کہا کہ جب سے سیاست شروع کی پہلی بار ہے الیکشن نہیں لڑرہا، موجودہ حالات میں الیکشن نہ لڑنا بہتر سمجھا لیکن سیاست نہیں چھوڑی۔

انہوں نے مزید کہا کہ زندگی میں اتنی پولرائزیشن اور تقسیم کبھی نہیں دیکھی، اس وقت ہمیں اتحاد اور عزت کی سیاست کی ضرورت ہے، وزیر اطلاعات تھا تو کہا جاتا تھا ن لیگ کے خلاف جارحانہ بات کروں میں نے پہلے بھی زبان قابو میں رکھی اور اب بھی رکھوں گا۔

Comments

- Advertisement -