site
stats
سائنس اور ٹیکنالوجی

سعودی عرب روبوٹ کو شہریت دینے والا پہلا ملک

ریاض : سعودی عرب نے روبوٹ کو شہریت دے کر امریکا، روس، جرمنی، برطانیہ سمیت تمام ملکوں کو پیچھے چھوڑ دیا ہے اور روبوٹ کو شہریت دینے والا پہلا ملک بن گیا۔

تفصیلات کے مطابق صوفیہ نامی خاتون روبوٹ نے دنیا بھر میں پہلی سعودی شہریت کا اعزاز حاصل کرلیا، تاریخ میں یہ پہلا موقع ہے کہ کسی روبوٹ کو کسی بھی ملک کی شہریت سے نوازا گیا ہے۔

سعودی عرب نے صوفیہ نامی خاتون روبوٹ کو شہریت دے کر دنیا کے تمام ممالک کو پیچھے چھوڑ دیا اور پاسپورٹ بھی جاری کردیا۔

شہریت پانے کے بعد روبوٹ صوفیا کا انٹرویو بھی کیا گیا، جس میں میزبان نے سوالات کیے جس کے روبوٹ نے اپنی ذہانت کے مطابق جواب دیئے۔

سوشل میڈیا پر شیئرکی گئی ویڈیو میں صوفیہ روبوٹ نے سعودی شہریت پانے پرخوشی کا اظہار کرتے ہوئے اسے اپنے لیےقابل فخر لمحہ قرار دیا اور کہا کہ سب سے زیادہ اس بات کی خوشی ہے کہ تاریخ میں پہلی مرتبہ کسی روبوٹ کو شہریت حاصل ہوئی ہے اور یہ اعزاز مجھے ملا۔

ایوان شاہی کے مشیر سعودی القحطانی نے سوشل میڈیا میں صوفیا نامی ربورٹ کی ویڈیو جاری کرتے ہوئے کہا کہ یہ پہلا روبوٹ ہے جسے سعودی شہریت اور پاسپورٹ جاری کیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ صوفیا نامی روبوٹ سوئس ماہرین نے تیار کیا ہے، ماضی کی مشہور ہالی ووڈ اداکارہ آڈرے ہپ برن سے مماثلت رکھنے والی صوفیا نامی یہ روبوٹ انسانوں کی گفتگو پر تاثرات ظاہر کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔

مصنوعی ذہانت کی حامل صوفیا کے چہرے کے تاثرات کی تبدیلی کے لیے اس کے اندر 60 قسم کے مکینزم نصب کیے گئے ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top