The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں گھریلو ملازمائیں اور ڈرائیورز کہاں سے آئیں گے؟

ریاض : سعودی عرب میں روزگار کیلئے جانے والے غیرملکیوں خصوصاً مزدور طبقے کا سب سے بڑا مسئلہ وقت پر مناسب ملازمت ہوتا ہے، جس کی وجہ سے انہیں شدید مشکلات درپیش ہوتی ہیں۔

اس حوالے سے سعودی حکومت نے غیرملکیوں کی اس پریشانی کے لیے اہم اقدام کیا ہے جس کے تحت تارکین وطن کو اس مسئلے سے چھٹکارا مل جائے گا۔

خبر کے مطابق سعودی عرب "سیرالیون” سے گھریلو ملازمائیں، ڈرائیورز اور عام ورکرز درآمد کرے گا۔ اس سلسلے میں سعودی وزارت افرادی قوت و سماجی بہبود نے پیر کو دو معاہدوں پر دستخط کیے ہیں۔

سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق معاہدوں کا مقصد سعودی عرب میں سیرالیون کے شہریوں کو روزگار فراہم کرنے کے حوالے سے تمام ضروری کارروائی پر اتفاق رائے پیدا کرنا ہے۔

معاہدوں کے بموجب سیرالیون کے ورکرز اور سعودی آجروں کے حقوق کو تحفظ حاصل ہوگا۔ قانون کے دائرے میں معاہدوں کے ضوابط پر عمل درآمد کا مشترکہ لائحہ عمل ترتیب دیا جائے گا۔

فریقین نے باہمی دلچسپی کے اہم امور پر تبادلہ خیال اور ملازمت سے تعلق رکھنے والے پروگراموں اور اسکیموں کا جائزہ لیا ہے۔

اس حوالے سے یہ بات بھی زیر بحث آئی کہ سعودی عرب کو درکار گھریلو عملے اور عام ورکرز کے لیے کس قسم کی مہارت مطلوب ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں