The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: سفر سے متعلق نئی وضاحت جاری!

ریاض: سعودی عرب میں خروج ونہائی(فائنل ایگزٹ) پر سفر سے متعلق نئی ہدایت جاری کی گئی ہے۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق سعودی محکمہ پاسپورٹ وامیگریشن(جوازات) سے ایک شہری نے استفسار کیا کہ مملکت سے واپسی سفر کے لیے فیملی کا خروج نہائی کتنی مدت قبل لگایا جاسکتا ہے جبکہ اقامے میں ابھی 3 ماہ دس دن باقی ہیں؟۔ جس پر جوازات نے وضاحت پیش کی۔

محکمہ کا کہنا تھا کہ خروج نہائی کے لیے 60 دن کی مہلت دی جاتی ہے، اگر اقامہ کی ایکسپائری میں 60 دن سے زیادہ کا وقت ہے تو فیملی فیس ادا کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔

جوازات نے بتایا کہ ساٹھ دن سے مدت کم ہونے کی صورت ہر دن کے حساب سے فیملی فیس ادا کی جائے گی۔

خیال رہے کہ سعودی عرب میں رہنے والے وہ غیر ملکی جو اپنے اہل خانہ کے ہمراہ مقیم ہیں ان کے فیملی ممبران پرماہانہ کی بنیاد پرفیس عائد کی جاتی ہے، فیملی فیس کا نفاذ جولائی 2017 سے کیا گیا ہے۔

سعودی عرب: اہل خانہ کو ‘خروج وعودہ’ پر بھیجنے والا غیرملکی بڑی مشکل میں پھنس گیا

مملکت میں ابتدائی طور پر فیس کی ماہانہ مد میں 100 ریال وصول کیے جاتے تھے بعد ازاں ہربرس 100 ریال کا اضافہ ہوا، اب یہ فیس 400 ریال ماہانہ کے حساب سے وصول کی جاتی ہے۔

واضح رہے کہ فیملی فیس یکمشت سالانہ بنیاد پرادا کرنے کے بعد ہی اقامے کی تجدید ممکن ہوتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں