The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: نئی ویزا پالیسی جاری کردی گئی

ریاض: سعودی وزارت محنت و سماجی بہبود نے افرادی قوت کی درآمد اور پیشوں کے حوالے سے نئی ویزا پالیسی جاری کردی۔

عرب میڈیا کے مطابق وزارت محنت نے افرادی قوت کی درآمد کے لیے مندرجہ ذیل شرائط اور ضوابط لاگو کردئیے گئے ہیں، نئے ملازمین کی آمد پر سعودی ملازم کی لیبر مارکیٹ سے چھٹی نہ ہو۔

نئے ملازم سعودی ملازمین کے لیے مسابقت کا مسئلہ پیدا نہ کریں، افرادی قوت کی درآمد کی درخواست دینے والا ادارہ سعودائزیشن کی مقررہ شرح کی پابندی کررہا ہو۔

نئی ویزا پالیسی کے مطابق ایسے کسی بھی پیشے پر غیرملکی کے لیے ویزا جاری نہیں ہوگا جو پیشہ سعودیوں کے لیے مختص ہوگا، کسی بھی ادارے کو غیرملکی ملازمین کے لیے ایسا کوئی ویزا جاری نہیں ہوگا جس کے اجراء سے متعلقہ محکمے میں سعودائزیشن کی شرح کم ہورہی ہو۔

مزید پڑھیں: سعودی عرب، ویزا کے حوالے سے نئے قوانین وضع

رپورٹ کے مطابق اٹھارہ برس سے کم عمر اور ساٹھ برس سے زیادہ غیرملکی کو ملازمت کی غرض سے ویزا جاری نہیں ہوگا، ساٹھ سال کی پابندی ڈاکٹرز، ماہرین اور وزیر محنت کی جانب سے جاری کردہ افراد پر لاگو نہیں ہوگا اور ان کی درخواستیں مسترد کردی جائیں گی۔

اگر ویزے طلب کرنے والا ادارہ ایسا ہو کہ جس نے اپنے ملازمین کی تنخواہیں ادا نہ کی ہوں، ایسا ادارہ جو اپنے نام سے غیرملکی کو کاروبار کراہا ہو، ایسا ادارہ جس کا مالک اپنے تمام یا بعض کارکنان کو کسی اور کے یہاں غیرقانونی طریقے سے ملازمت کی اجازت دئیے ہوئے ہو۔

ایسے ادارے کو بھی نئے ویزے جاری نہیں ہوں گے جو سعوائزیشن کی کم سے کم تعداد پوری نہ کررہا ہو۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں