The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں تیل کی تنصیبات پرحملہ، ٹرمپ کا ذمہ داران کیخلاف فوجی کارروائی کااشارہ

واشنگٹن : سعودی عرب میں آئل کمپنی آرامکو پر ڈرون حملے سے عالی برادری میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ، امریکی صدر ٹرمپ نے حملے کے ذمہ داران کیخلاف فوجی کارروائی کا اشارہ دے دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سعودی عرب میں آئل تنصیبات پر ڈرون حملے سے دنیا بھرمیں ہل چل مچ گئی اور تیل کی قمیتیں آسمان پر پہنچ گئیں۔

امریکی صدر ٹرمپ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر حملوں پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا سعودی عرب کی تیل کی سپلائی پرحملہ ہوا، امریکہ جانتا ہے کہ مجرم کون ہے اور وہ ان حملوں کے ذمہ داران کے خلاف کارروائی کے لیے تیار ہیں لیکن وہ سعودیوں سے سننا چاہتے ہیں کہ اس حملے کے پیچھے کون ملوث تھا اور وہ کس طرح آگے بڑھنا چاہتے ہیں۔

امریکی حکام نے ایران کو ان حملوں کا ذمہ دار قرار دیا ہے تاہم ایران نے الزام کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ ان حملوں سے خطے میں کشیدگی بڑھ سکتی ہے۔

دوسری جانب متحدہ عرب امارت نے حملوں کی مذمت کرتے ہوئےکہ اس مشکل وقت سعودی عرب کیساتھ ہیں جبکہ اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتریس نے بھی آرامکو پر حملے کی شدید مذمت کی۔

خیال رہے یمن کے حوثی باغیوں نے ہفتے کوآئل کمپنی آرامکو پر حملوں کی ذمہ داری قبول کی تھی، ڈرون حملوں میں دنیا میں تیل صاف کرنے کا سب سے بڑا کارخانہ بھی متاثر ہوا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں