The news is by your side.

امریکہ کی سعودی عرب کو پیٹریاٹ میزائلوں کی فروخت

سعودی عرب کو بیرونی کے خطرات سے نمٹنے اور اس کے سدباب کے لیے امریکہ نے پیٹریاٹ میزائل کی فروخت کی منظوری دے دی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق امریکی میزائل ڈیفنس سسٹم کی مالیت 5 ارب ڈالر سے زائد ہے، سعودی عرب 3.05 ارب اور یو اے ای 2.25 ارب ڈالرز کا میزائل ڈیفنس سسٹم خریدے گا۔

اس حوالے سے امریکی محکمہ دفاع پینٹاگون نے بتایا ہے کہ محکمہ خارجہ نے سعودی عرب کے ساتھ تین ارب ڈالر مالیت کے معاہدے کی منظوری دی ہے جس کے تحت پیٹریاٹ میزائل اور دیگر متعلقہ آلات بھی فراہم کیے جائیں گے۔

پینٹاگون ذرائع کے مطابق متحدہ عرب امارات کو دفاعی سامان فراہم کرنے کے دو ارب 25 کروڑ ڈالر کے معاہدے کی بھی منظوری دی گئی ہے۔ اس میں امریکی دفاعی نظام ’تھاڈ‘میزائل (ٹرمینل ہائی ایلٹی ٹیوڈ ایریا ڈیفنس) اور تھاڈ ٹرمینل فائر کنٹرول اور کمیونیکیشن اسٹیشن شامل ہیں۔

امریکی محکمہ خارجہ نے ایک نوٹس میں کانگریس کو میزائل کی فروخت کے حوالے سے بتایا کہ مجوزہ فروخت سعودی عرب کے پیٹریاٹ جم ٹی میزائلوں کے گھٹتے ہوئے ذخیرے کو مستحکم کرکے موجودہ اور مستقبل کے خطرات سے نمٹنے کے لیے مملکت کی صلاحیت کو بہتر بنائے گی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق مذکورہ میزائل سسٹم لانگ رینج بیلسٹک، کروز میزائل اور جنگی طیارہ مار گرانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

واضح رہے کہ امریکی صدر جو بائیڈن کے گزشتہ ماہ سعودی عرب کے دورے کے بعد جاری ہونے والے مشترکہ اعلامیے میں اس بات کا اعادہ کیا گیا تھا کہ کئی دہائیوں سے امریکہ اور سعودی عرب کی شراکت داری خطے کی سلامتی کے لیے مرکزی کردار ادا کرتی رہی ہے، دونوں ممالک ایک مزید محفوظ، مستحکم اور خوشحال خطہ چاہتے ہیں جو دنیا کے ساتھ منسلک ہو۔

Comments

یہ بھی پڑھیں