The news is by your side.

Advertisement

سعودی لڑکی راہف القانون کینیڈا پہنچ گئیں

اوٹاوا: سعودی عرب سے فرار ہونے والی 18 سالہ لڑکی راہف محمد القانون سیاسی پناہ ملنے کے بعد کینیڈا پہنچ گئیں۔

تفصیلات کے مطابق اپنے خاندان کو چھوڑنے اور بنکاک ایئرپورٹ پر پھنس جانے والی سعودی لڑکی راہف محمد القانون کینیڈا پہنچ گئیں۔

راہف محمد القانون جب ٹورنٹو ایئرپورٹ پہنچیں تو کینیڈا کی وزیرخارجہ کرسٹیا فریلینڈ نے انہیں ایک نئی بہادر کینیڈین کے طور پرمتعارف کروایا۔

کینیڈین وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ راہف محمد القانون نے بات کرنے سے اجتناب کیا ہے چونکہ طویل سفر کے بعد وہ تھکن سے چُور ہیں۔

سعودی لڑکی راہف القانون کو کینیڈا نے پناہ دے دی

اس سے قبل گزشتہ روز کینیڈا کے وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے راہف محمد القانون کو سیاسی پناہ دینے سے متعلق اقوام متحدہ کی درخواست منظور کی تھی۔

کینیڈین وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ہمیں راہف کو سیاسی پناہ دینے پر خوشی ہے کیونکہ کینیڈا وہ ملک ہے جو انسانی حقوق اور خواتین کے لیے آواز اٹھانے کی اہمیت کو سمجھتا ہے اور میں اس بات کی تصدیق کررہا ہوں کہ ہم نے اقوام متحدہ کی درخواست قبول کرلی ہے۔

یاد رہے کہ 18 سالہ لڑکی راہف محمد القانون براستہ بنکاک آسٹریلیا جانا چاہتی تھی لیکن انہیں پہلے کویت واپس جانے کے لیے کہا گیا جہاں ان کا خاندان ان کا انتظارکر رہا تھا۔

راہف نے واپس جانے سے انکار کردیا تھا اور ایئرپورٹ کے ہوٹل کے ایک کمرے میں خود کو بند کرلیا تھا جس سے انہیں بین الاقوامی توجہ بھی حاصل ہوئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں