تازہ ترین

کوئٹہ: تفتان جانیوالی بس سے اغوا کیے گئے 9 مسافر قتل

کوئٹہ:نوشکی کے قریب تفتان جانیوالی بس سے اغوا کیے...

بہاولنگر واقعے کی مشترکہ تحقیقات ہوں گی، آئی ایس پی آر

آئی ایس پی آر نے کہا ہے کہ بہاولنگر...

عیدالفطر پر وفاقی حکومت نے عوام کو خوشخبری سنا دی

اسلام آباد: عیدالفطر کے موقع پر وفاقی حکومت نے...

ایشیائی بینک نے پاکستان میں مہنگائی میں کمی کی پیشگوئی کر دی

ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان میں آئندہ مالی سال...

سنگدل شخص نے بیوی اور 7 بچوں کو قتل کر دیا

پنجاب کے علاقے مظفر گڑھ میں اجتماعی قتل کا...

کراچی میں غیر قانونی تعمیرات میں ملوث افسران کیخلاف گھیرا تنگ

کراچی: سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی (ایس بی سی اے) نے 21 افسران کو غیرقانونی تعمیرات روکنے میں ناکامی اور ایکشن نہ لینے پر اظہارِ وجوہ کا نوٹس جاری کردیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی (ایس بی سی اے) نے غیر قانونی تعمیرات میں ملوث افسران کے خلاف گھیرا تنگ کردیا۔

ایس بی سی اے کے 21 افسران کو غیرقانونی تعمیرات روکنے میں ناکامی اور ایکشن نہ لینے پر اظہارِ وجوہ کا نوٹس جاری کردیا گیا ، تحقیقاتی رپورٹ کے بعد سخت محکمہ جاتی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

شو کاز نوٹس سال 2022ء میں مذکورہ افسران کی پوسٹنگ کے دوران پلاٹ نمبر A-83 اور پلاٹ نمبر A-86 ، بلاک Q ،نارتھ ناظم آباد پر نقشے کی منظوری کے بغیر تین منزلہ غیر قانونی تعمیرات کے معاملے میں جاری کئے گئے۔

افسران میں چار ڈپٹی ڈائریکٹرز، چار اسسٹنٹ ڈائریکٹرز ، چار سینئیر بلڈنگ انسپیکٹر ز اور نو لیڈنگ انسپیکٹر ز شامل ہیں، نوٹس میں کہا گیا کہ
مذکورہ افسران نے سال 2022 میں تعیناتی کے دوران غیر قانونی تعمیرات پر کارروائی نہیں کی۔

اظہار وجوہ کا نوٹس دیتے ہوئے ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل سامت علی خان کو انکوائری افسر مقرر کردیا گیا ہے ، سامت علی خان 15 یوم میں تحقیقات کرکے رپورٹ جمع کرائیں گئے۔

ڈپٹی ڈائریکٹرز ذرغام حیدر،اویس حسین،عبدالعامر خان اور آغا جہانگیر ، اسسٹنٹ ڈائریکٹرز احتشام خان،آصف حسین،الطاف کھوکھر اور نواب علی منگریجو ، سنئیر بلڈنگ انسپیکٹرز محمد عامر،شکیل احمد،امیر الحسن،شفیع مگسی کو شوکاز جاری کیا گیا۔

عبدالرشید سولنگی نے کہا کہ غیر قانونی تعمیرات اور اس میں ملوث افسران کے خلاف کارروائی میں کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی۔

Comments

- Advertisement -