The news is by your side.

Advertisement

نیند سے بیدار ہونے کا درست ترین الارم

نیند سے بیدار ہونے کے لیے درست ترین الارم کے حوالے سے سائنس دانوں کا کہنا ہے کہ بعض اقسام کی فریکوئینسی اور فی منٹ بیٹ والے الارم دماغ کے بیداری والے حصے کو زیادہ سرگرم کرسکتے ہیں۔

تحقیق کے مطابق مائیکل جیکسن کا گانا ”اے بی سی“ دماغ کے بیداری حصے کو زیادہ سرگرم کرنے کی بہترین مثال ہے۔ اس گانے میں فریکوئنسی 500 ہرٹز اور بیٹس کی تعداد 100 تک ہےجو ایک ایسی دھن تیار کرتے ہیں جو دماغ کی بیداری کے حصے کو سرگرم کرتے ہیں۔

مزید پڑھیں: نیند پوری کرنے سے پہلے یہ جان لیں

آسٹریلیا کی آر ایم آئی ٹی یونیورسٹی میں صوتیات کے ماہر ڈاکٹر اسٹوارٹ مک فرلین اور ان کے ساتھیوں کا کہنا ہے کہ فون پر الارم کا انتخاب کرنے کے لیے صرف دھن نہیں بلکہ اس میں دیگر چیزوں کو بھی مدنظر رکھنا ضروری ہے۔

بیدار ہونے کا انداز پورے دن ہمارے بدن پر اثر انداز ہوسکتا ہے، اس لیے الارم ایسا ہونا چاہیے جو ایک سوئچ کی طرح کام کر کے ہمیں مکمل طور پر بیدار کر سکے۔ درست الارم کی فریکوئنسی دماغ کے درست حصے کو بیدار کرتی ہے۔

جاگنے کے لیے ضروری ہے کہ دماغ کے تمام حصوں میں خون کی روانی عین اسی طرح ہو جائے جو بیداری میں ہوتی ہے اور بعض فریکوئنسی کی آوازیں اس میں مدد دے سکتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں