The news is by your side.

Advertisement

جسٹس(ر) ناصرالملک پر سب کو بھروسہ ہے: فروغ نسیم

شفاف الیکشن کرانا نگراں حکومت اور اداروں کی اولین ترجیح ہوگی

اسلام آباد: معروف ماہرین قانون اور ایم کیو ایم کے سینیٹر فروغ نسیم نے کہا ہے کہ جسٹس(ر) ناصرالملک پر سب کو بھروسہ ہے.

ان خیالات کا اظہار انھوں نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام دی رپورٹرز میں گفتگو کرتے ہوئے کیا. سینیٹر فروغ نسیم کا کہنا تھا کہ ناصرالملک انصاف پسند آدمی ہیں.

الیکشن میں دو سے چار ماہ تاخیرمعنی نہیں رکھتی، الیکشن شفاف ہونے چاہییں، یہ اصل ٹارگیٹ ہے

فروغ نسیم

ایک سوال کے جواب میں فروغ نسیم نے کہا کہ الیکشن میں دو سے چار ماہ تاخیرمعنی نہیں رکھتی، الیکشن شفاف ہونے چاہییں، یہ اصل ٹارگیٹ ہے.

ان کا کہنا تھا کہ 20 سال تاخیر سے مردم شماری کرائی گئی، افسوس وہ بھی درست طریقے سے نہیں کرائی گئی.

حلقہ بندیوں کامعاملہ حل کرنے کے لئے الیکشن میں تاخیر پر کوئی مضائقہ نہیں، مردم شماری شفاف نہیں ہوگی تو الیکشن بھی شفاف نہیں کہلائیں گے.

فروغ نسیم کا کہنا تھا کہ الیکشن شیڈول آنے کے بعد الیکشن کمیشن بااختیار ہوجاتا ہے، شفاف الیکشن کرانا نگراں حکومت ،اداروں کی اولین ترجیح ہوگی.

یاد رہے کہ 28 مئی کو مطابق اپوزیشن لیڈرخورشید شاہ نے وزیراعظم کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے نگراں وزیراعظم کا اعلان کیا تھا کہ سابق چیف جسٹس جسٹس(ر) ناصرالملک نگراں وزیراعظم ہوں گے۔


سابق چیف جسٹس(ر)ناصرالملک نگراں وزیراعظم ہوں گے


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں