The news is by your side.

Advertisement

وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا دورہ چین کے حوالے سے اہم بیان

بیجنگ: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ چین کے تعاون سے 55 سال بعد 3 بار مسئلہ کشمیرکو سلامتی کونسل میں لائے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ پاک چین اسٹریٹجک مذاکرات میں پاکستان کی نمائندگی کروں گا،چین کے وزیر خارجہ وانگ ژی کے ساتھ بھی ملاقات ہوگی۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پاکستان،چین دنیا کی بدلتی صورت حال پر تبادلہ خیال کے خواہشمند ہیں،اقتصادی راہداری سمیت مختلف شعبوں میں تعاون پر بات ہوگی،کشمیر کی صورتحال دونوں ممالک کے لیے اہمیت کی حامل ہے۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ مظلوم کشمیریوں سے جو سلوک روا رکھا گیا ہے وہ سب کے علم میں ہے،چین کے تعاون سے 55 سال بعد 3 بار مسئلہ کشمیر کو سلامتی کونسل میں لائے۔

انہوں نے کہا کہ چین اور پاکستان نے کرونا وبا پر کافی حد تک قابو پالیا ہے،کرونا وبا میں کمی کے بعد یہ میرا پہلا دورہ چین ہے،چین،پاکستان جانتے ہیں خطے میں اہم تبدیلیاں ہوئی ہیں۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ سعودی عرب کا اسرائیل پر دوٹوک مؤقف ہے، یہ ان کا تاریخی مؤقف ہے۔انہوں نے کہا کہ سعودی عرب پاکستان کے تعلقات ہمیشہ سے اچھے رہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں