site
stats
انٹرٹینمںٹ

ہندو انتہاء پسندوں کی بوکھلاہٹ، کنگ خان کو غدار قرار دے دیا

ممبئی: ہندو انتہاء پسندوں نے بالی ووڈ کے معروف اداکار شاہ رخ خان کو غدار قرار دیتے ہوئے اُن کی نئی آنے والی فلم رئیس کا مکمل بائیکاٹ کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ہندو انتہاء پسندوں نے پاکستانی فنکاروں کی آڑ میں اپنے ہی ملک کے مسلمان اداکاروں کو تعصب کا نشانہ بنانا شروع کردیا، بھارتیہ جنتا پارٹی بالی ووڈ کے کنگ خان کی نئی آنے والی فلم رئیس کے خلاف کھل کر میدان میں آگئی۔

mahira-raees

بھارتیہ جنتا پارٹی کے جنرل سیکریٹری کیلاش وجے ورگیا نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ایک ٹوئٹ میں کنگ خان کو غدار قرار دیتے ہوئے اُن کی نئی آنے والی فلم رئیس کے بائیکاٹ اور ہرتھیک کی فلم کابل کی حمایت کا اعلان کیا۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر بھارتیہ جنتا پارٹی کے رہنما نے کہا کہ ’’جورئیس ملک کا نہیں وہ ہمارے کسی کام کا نہیں جبکہ ’’کابل‘‘ محب وطن ہے جس کا ساتھ پورے ہندوستان کو دینا چاہیے‘‘۔

shahrukh-post-1

یاد رہے بھارتیہ جنتا پارٹی کی جانب سے شاہ رخ خان کی فلموں ’’دل والے ‘‘ اور ’’فین‘‘ کا بائیکاٹ بھی کیا گیا تھا تاہم ایک بار پھر بے جے پی کے انتہاء پسند کنگ خان کی مخالفت میں کھڑے ہوگئے ہیں۔

mahira-raess

خیال رہے کہ فلم رئیس کی نمائش رواں ماہ کی 25 تاریخ کو کی جائے گی جس میں پاکستانی اداکارہ ماہرہ کنگ خان کی اہلیہ کا کردار ادا کررہی ہیں جبکہ اسی روز ہریتھک روشن کی فلم کابل بھی ریلیز کی جارہی ہے۔

kaabil-post-1

بالی ووڈ کے کنگ خان نے حالیہ دنوں دیے جانے والے انٹرویو میں ماہرہ کی صلاحیتوں اور اداکاری کی تعریف کرتے ہوئے کہا تھا کہ مجھے نئی اداکارہ سے بہت کچھ سیکھنے کو ملا اور میں اُن کا مستقبل بہت روشن دیکھ رہا ہوں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top